Daily Mashriq

پشاور،صرف14ہزارگھرپانی کابل اداکر رہے ہیں

پشاور،صرف14ہزارگھرپانی کابل اداکر رہے ہیں

پشاور (صابر شاہ ہوتی) دنیا بھر کی طرح پا کستان کوبھی پانی کی قلت کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے اور پشاور میں پینے کے صاف پانی سے متعلق حیرت انگیز انکشافات ہوئے ہے۔ '' مشرق '' کو حاصل کردہ معلومات کے مطابق پشاور کی43یونین کونسلز میں 69239رجسٹرڈ نلکے ہیں جن میں سے صرف 14000گھر پانی کا بل ادا کرتے ہیں ،جبکہ باقی 55239بل ادا نہیں کررہے ، تاحال محکمہ کی جانب سے ابھی تک صرف 4کروڑ 21لاکھ روپے کی ریکوری ہوئی ہے جبکہ77کروڑ روپے کی ریکوری ابھی واجب الاادا ہے، صرف دو زنز میں 36000غیر قانونی نلکے تھے جنکو رجسڑڈ کیا گیاباقی کے دو زنز میں تا حال سروے نہیںہوا۔جہاں ابھی بھی ہزاروں غیر قانونی نلکے موجود ہیں ان دو زونز میں بعد میں کسٹمر سروے کرایا جائیگا، پشاور کے چار زونزکی43یونین کونسلز میں 512ٹیوب ویلز قائم ہیں ان ٹیوب ویلز میںبجلی کے بلز ہرماہ 2لاکھ 50ہزار روپے آتے ہیں ،محکمہ واٹر اینڈ سنیٹیشن کے مطابق ابھی تک 4کروڑ 21لاکھ روپے کی ریکوری ہوئی ہیں اور ابھی 77کروڑ روپے واجب الادا ہیں ، ریکارڈ کے مطابق 36000غیر قانونی کنکشنز کو کسٹمر سروے آپریشن کے دوران رجسٹرڈکیاجا چکا ہے۔ پچھلے مہینے 999نئے کنکشنز لگائے گئے ہیں ، پشاور جسکی 1,218,773آبادی ہیں اس میں شہر کے علاقوں کو چار زونز میں تقسیم کیا گیا ہے ان چار زنز میں 512ٹیوب ویلز قائم ہیں ان ٹیوب ویلز کا ہر ماہ 2 لاکھ 50 ہزار روپے بجلی کے بلز محکمہ ادا کرتی ہے، زون اے میں فقیر آباد ، بشیر آباد، دلہ زاک روڈ، زون- بی میں اندرون شہر اور مضافاتی، زون -سی میںپاوکہ ، کوہاٹ روڈ، گلبرگ، سپینہ واڑے، رنگ روڈ، باڑہ روڈاور بورڈ بازار کے علاقے شامل ہیں ، محکمہ کی جانب ابھی تک صرف دوزونز میں کسٹمرز سروے ہوچکے ہیں جبکہ دو زنز میں ابھی بھی سروے باقی ہے اس دوران ہزاروں کی تعداد میں غیر قانونی کنکشنز کو رجسٹرڈ کرایا گیا جبکہ دو اور زونز جن میں تا حال کسٹمر ز سروے کا انعقاد نہیں ہواوہاں پر ابھی بھی ہزاروں کی تعداد میں غیر قانونی کنکشنز موجود ہیں ۔

متعلقہ خبریں