Daily Mashriq


جن مقدامات کا فیصلہ ہو چکا ہے انہیں دوبارہ نہیں کھولا جا سکتا، خواجہ حارث

جن مقدامات کا فیصلہ ہو چکا ہے انہیں دوبارہ نہیں کھولا جا سکتا، خواجہ حارث

خواجہ حارث نے اپنی دلائل دیتے ہوئے سپریم کورٹ کو 20اپریل کا فیصلہ سناتے ہوئے کہا کہ عدالت اپنے حکم میں تحقیقات کی سمت کا تعین کر چکی ہے۔انہوں نے سپریم کورٹ کی جانب سے دئے گئے 13سوالات بھی پڑھ کر سنائے کہا کہ سپریم کورٹ نےنوازشریف کیخلاف کسی مقدمےکودوبارہ کھولنےکاحکم نہیں دیاتھا۔انہوں نے کہا کہ سپریم کورٹ نےلندن فلیٹس،قطری خط،بیئررسرٹیفکیٹ سےمتعلق سوالات پوچھے،سپریم کورٹ نے جو سوالات پوچھے ان کے جواب مانگے گئے تھے۔

جسٹس عظمت سعید شیخ نے استفسار کیا کہ آپ کہناچاہتےہیں کہ کسی پراپرٹی پرتحقیقات جےآئی ٹی کادائرہ کارنہیں تھا؟

جسٹس اعجاز نے ریمارکس دیے کہ فیصلےمیں لکھاہےایف آئی اے کےپاس کوئی ثبوت ہوتواسکاجائزہ لیاجاسکتاہے۔

خواجہ حارث نے دلائل آگے بڑھاتے ہوئے کہا کہ جےآئی ٹی نے 13 کے بجائے 15سوالات کر لیے، جو مقدمات ختم ہو گئے تھے ان کی بھی جانچ پڑتال کی گئی۔ انہوں نے کہا کہ التوفیق کیس کا فیصلہ ہو چکا ہے ، دوبارہ نہیں کھولا جا سکتا۔

متعلقہ خبریں