Daily Mashriq

تابوت، کفن اور میت سے متعلقہ دیگر اشیاء بھی مہنگی ہوگئیں

تابوت، کفن اور میت سے متعلقہ دیگر اشیاء بھی مہنگی ہوگئیں

پشاور(صابر شاہ ہوتی)گزشتہ ایک سال کے دوران تابوت ، کفن اور میت کوسنبھالنے والی دوسری اشیاء بھی مہنگائی کی لپیٹ میں آئی ہوئی ہے ایک سال قبل جو تابوت 1200روپے میں فروحت ہو رہا تھا اسکی قیمت اب بڑھ کر 1700روپے ہو گئی ہے اور اسی طرح کفن جو کہ پہلے 800روپے میں فروحت کی جاتا تھا ایک سال کے اندر 1300روپے تک پہنچ گئی جبکہ سلا ہوا کفن 1600روپے میں فروحت ہونے لگا ہے ۔ اندرون شہر منڈا بیری جہاں پر بر سوں سے میتوں کو سنبھالنے کی اشیاء فروحت کی جاتی ہے وہاں پر اس کاروبار سے منسلک دکانداروں کا کہنا ہے کہ قیمتیں ملک میں جاری مہنگائی کی وجہ سے بڑھ گئی ہے انکا کہنا تھا تابوت اور کفن کی قیمت میں ایک سال کے اندر 500روپے کا اضافہ یک دم ہوا ہے جس کی وجہ سے تابوتوں کی فروحت میں حد درجہ کمی آگئی ہے اور پہلے تابوت جو کہ دن میں 5سے 6فروخت ہوتے تھے اب دن میں صرف 1یا 2تابوت فروحت ہورہے ہیں۔

جس کی وجہ لوگوں کی کم خرید قوت ہے ، انکا کہنا تھا کہ اکثر لوگ آتے ہیں اور قیمتیں پوچھ کر واپس چلیں جاتے ہیں ۔ دکانداروں کا کہنا تھا کہ تابوت کی تیار ی میں استعمال ہونے والے کیلوں کی قیمتوں میں بھی اضافہ ہوا ہے اور 200روپے میں ملنے والاکیلوں کا بنڈل اب500روپے تک پہنچ گیا ہے ۔

متعلقہ خبریں