Daily Mashriq

پی ایس ایل سے پاکستان کی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ بہتر ہوئی ہے، وقار یونس

پی ایس ایل سے پاکستان کی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ بہتر ہوئی ہے، وقار یونس

پاکستان کرکٹ ٹیم کے سابق کپتان اور پاکستان سپر لیگ (پی ایس ایل) کی دفاعی چمپیئن اسلام آباد یونائیٹڈ کے ڈائریکٹر وقاریونس نے کہا ہے کہ لیگ نے پاکستانی ٹی ٹوئنٹی کرکٹ کو بہتر کیا ہے اور مسلسل نیا ٹیلنٹ سامنے آرہا ہے۔

وقاریونس کا کہنا تھا کہ ‘میرے خیال میں اگر آپ مختصر طرز کو دیکھیں تو محسوس ہوگا کہ اس میں اہم بہتری آئی ہے جس کی بنیادی وجہ پی ایس ایل ہے’۔

پی ایس ایل کی ویب سائٹ کو انٹرویو میں ان کا کہنا تھا کہ ‘پی ایس ایل نے پاکستان کو نیا ٹیلنٹ دیا اور پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) نے اس کو عروج پر پہنچایا’۔

خیال رہے کہ وقار یونس پی ایس ایل کے پہلے ایڈیشن میں پاکستان کرکٹ ٹیم کے ہیڈ کوچ تھے تاہم 2016 میں ورلڈ ٹی ٹوئنٹی میں شکست کے بعد عہدے سے مستعفی ہوگئے تھے۔

انہوں نے کہا کہ ‘پی ایس ایل کے ہرسیزن میں نیا ٹیلنٹ سامنے آیا اور اسلام آباد یونائیٹڈ سے بھی چند اچھے کھلاڑی ملے ہیں’۔

ومی ٹیم کے سابق کپتان نے کہا کہ شاہین شاہ آفریدی سب سے بڑی مثال ہیں جو ایک اسٹار ہیں اور پی ایس ایل میں میچور ہوئے ہیں اور میں ان سے بہت متاثر ہوا ہوں۔

وقاریونس نے کہا کہ ‘پی ایس ایل سے کھلاڑیوں کی دریافت کے بعد ان کی تربیت کے لیے پی سی بی کی ذمہ داری بڑھ جاتی ہے اور لیگ سے انڈر 19 کھلاڑی ابھر کر آرہے ہیں’۔

پی ایس ایل سے ابھرنے والے نئے کھلاڑیوں پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ‘یہ نئے کھلاڑی پاکستان کا مستقبل ہے، فرنچائزوں نے انہیں موقع دیا اور فرنچائز جیتنا چاہتی ہیں لیکن وہ کھلاڑیوں کی تربیت بھی کرتی ہیں جس کے بعد پی سی بی باری آتی ہے’۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کو فرسٹ کلاس کرکٹ پر مزید توجہ دینے کی ضرورت ہے تاہم پی ایس ایل کو کامیابی قرار دیتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ جو نظر آرہا ہے وہ اچھا ہے، اچھا محسوس ہورہا ہے اور نتیجہ بھی اچھا مل رہا ہے۔

اسلام آباد یونائیٹڈ کے ڈائریکٹر نے کہا کہ ‘ہماری زیادہ توجہ پی ایس ایل پر ہے اور ہمیں اسی طرح فرسٹ کلاس پر بھی توجہ دینی ہے، مجھے سننے کو مل رہا ہے کہ تبدیلیاں آرہی ہیں، اسپانسرز ریجن کے ساتھ مل رہے ہیں اس لیے ہوسکتا ہے اگلے چند برسوں میں ہمیں کچھ تبدیلیاں نظر آئیں اور ہم پی ایس ایل کی طرح ٹیسٹ کے لیے بھی کھلاڑی متعارف کروانا شروع کریں گے’۔

کرکٹ کا وسیع تجربہ رکھنے والے عظیم باؤلر نے کہا کہ میرا ماننا ہے کہ پی ایس ایل جب پاکستان میں ہوگی تو یہ دنیا کی صف اول کی لیگ بنے گی۔

ان کا کہنا تھا کہ ‘اس وقت یہ تین سرفہرست لیگز میں شامل ہے، آئی پی ایل پہلے نمبر پر ہے اس میں کوئی شک نہیں تاہم پی ایس ایل بڑی اور بہتر ہورہی ہے، ضرورت اس بات کی ہے کہ اس کو مکمل طور پر پاکستان میں کروا دیا جائے’۔

وقاریونس نے کہا کہ ‘جب ایک مرتبہ مکمل طور پر پاکستان میں ہوئی تو یہ سب سے بڑی لیگ بن جائے گی، اس مرتبہ پاکستان میں 8 میچ ہوں گے، اگلے سال ہوسکتا ہے آدھے میچز پاکستان میں ہوں’۔

متعلقہ خبریں