Daily Mashriq


وزیرِاعظم عمران خان کا قوم سے پہلا خطاب،ملک کو فلاحی ریاست بنانےکا عزم

وزیرِاعظم عمران خان کا قوم سے پہلا خطاب،ملک کو فلاحی ریاست بنانےکا عزم

 ویب ڈیسک:وزیراعظم عمران خان اپنے پہلے خطاب میں کہا کہ نا پاکستان کو اس وقت بے شمار چینلجز درپیش ہیں میں ان سے نکلنے کا حل بتاؤں گا قوم کو گھبرانے کی ضرورت نہیں میرا ساتھ دیں۔ ملک کو ایک فلاحی ریاست بناوں گا۔

وزیراعظم عمران خان کے خطاب کے اہم نکات

پاکستان پرکبھی بھی اتنے مشکل مالی حالات نہیں تھے

دس سال قبل پاکستان پر6 ہزار ارب کا قرض تھااب 28ہزار بڑھ چکاہے

 جو اب 28 ہزار ارب تک بڑھ چکا ہے۔

 قرضوں کا سود اتارنے کیلئے ہمیں مزید قرضہ لینا پڑ رہا ہے، قرضوں کی وجہ سے روپے کی قدر میں کمی ہوئی۔

پاکستان کے 45 فیصد بچوں کو پوری خوراک نہیں ملتی

پانچ سال سے کم عمر بچے گندا پانی پینے کی وجہ سے مر جاتے ہیں

ہمارے سوا دو کروڑ بچے سکولوں سے باہر ہیں۔

ہم مقروض قوم ہیں، ہمارے پاس پیسہ نہیں ہے

وزیرِاعظم کے پاس 524 ملازم ہیں، وزیرِاعظم ہاؤس کا رقبہ 1100 کینال ہے

وزیرِاعظم کے پاس 80 گاڑیاں ہیں جن میں سے 33 بُلٹ پروف ہیں

 ہمیں اپنی سوچ کو بدلنا ہو گا،ہمیں سادگی اختیار کرنا ہوگی

سیکیورٹی ایشوز کی وجہ سے صرف دو گاڑیاں اور دو ملازم رکھوں گا

بُلٹ پروف سرکاری گاڑیوں کی نیلامی کروائیں گے

کسی گورنر ہاؤس میں ہمارا گورنر نہیں رہے گا

  وزیرِاعظم ہاؤس میں اعلیٰ طرز کی ریسرچ یونیورسٹی بنائیں گے

 قانون کی بالادستی کے بغیر کوئی قوم ترقی نہیں کر سکتی

قانون سب کے لیے برابر ہوتا ہے

ہمارے نبی ﷺ نے سب سے پہلے قانون کی بالادستی قائم کی

مدینہ کی ریاست میں قانون سب کے لیے ایک جیسا تھا

ہمارے نبی ﷺ دنیا کے عظیم لیڈر تھے

ہمیں اپنے نبی ﷺ کی زندگی سے سیکھنا ہو گا۔

انہوں نے کہا کہ میرا وعدہ قوم کو پاؤں پر کھڑا کرنا ہے

بیس کروڑ میں سے صرف 8 لاکھ لوگ ٹیکس دیتے ہیں

عوام جہاد سمجھ کر ٹیکس دیں بتائیں گے کہ عوام کا کتنا پیسہ بچایا

پہلے ایف بی آر کو ٹھیک کریں گے وہاں پر کرپشن زیادہ ہے

 سرمایہ کاروں کے لیے ون ونڈ آپریشن ہو گا

حکومت ایکسپورٹ انڈسٹری کی پوری مدد کرے گی

 منی لانڈرنگ سے بھیجے گئے پیسوں کو پاکستان لائیں گے

 کبھی اس لیڈر کو ووٹ نہ دیں جس کا پیسہ پاکستان میں نہ ہو

 پاکستان پر مشکل وقت ہے اوورسیز پاکستانی مدد کریں

اوورسیز پاکستانیز اپنا پیسہ پاکستان میں لے کر آئیں

ہم نیب چیئرمین کو طاقت ور بنانے کے لیے مدد کریں گے

خیبر پختونخوا کی طرح وسل بلور ایکٹ قانون بنائیں گے

کرپشن کی نشاندہی کرنے والے کو 20 سے25 فیصد دیں گے

مافیا پیسہ چوری کر کے بیرونِ ملک لے جا رہے ہیں، ان پرخود نظررکھوں گا جب کرپٹ لوگوں پر ہاتھ ڈالیں گے تو وہ شور مچائیں گے سڑکوں پر آئیں گے وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ عوام نے میرا ساتھ دینا ہے

کئی بیواؤں کی زمینوں پر قبضے ہیں جن کے سالوں سے فیصلے نہیں ہوئے

 عدل کا نظام ٹھیک کرنے کے لیے چیف جسٹس سے ملاقات کروں گا۔

خیبر پختونخوا کی طرح ہسپتالوں میں ریفارمز لائیں گے

 پورے پاکستان میں ہیلتھ کارڈ جاری کریں گے۔

ہم تعلیم کے نظام کو ٹھیک کریں گے اس کی بہتری کیلئے پورا زورلگائیں گے سوادوکروڑبچوں تعلیم سے محروم ہیں مدارس کی تعلیم کو بھی بہتر کرنا ہے

پاکستان کے زرعی نظام کی بہتری کی طرف لائیں گے

 کسانوں  کی ہر طرح مدد کریں گے

دیامربھاشا ڈیم ناگزیر ہو چکا ہے

سول سروسز میں ریفارمز بہت ضروری ہیں

 1960ء میں پاکستان کی سول سروسز ایشیا میں بہترین تھی

ڈاکٹر عشرت حسین کی سربراہی میں سول سروس ریفارمز کمیٹی کام کرے گی

 جو کام کرےگااسکوبونس جو کام نہیں کرے گا سزا اور جزا ہو گی

پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کے لیے مدینہ کی ریاست کے اصولوں کو اپنانا ہو گا

میں سادہ زندگی گزار کر دکھاؤں گا، جب تک اقتدار میں رہا کوئی بزنس نہیں کروں گا

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ پاکستان کو امن کی ضرورت ہے

 تمام ہمسایہ ممالک سے تعلقات کو بہتر بنائیں گے

 جلد فاٹا کو ضم اور ترقیاتی کام کروائیں گے

 ہم اپنے نوجوانوں کو ہنرمند ایجوکیشن دلوائیں گے

پانچ سالوں کے اندر پچاس لاکھ سستے گھر بنانے ہیں

 پچاس لاکھ گھر بنانے سے نوجوانوں کو نوکریاں ملیں گی۔

میں ایک عظیم پاکستان دیکھنا چاہتا ہوں

 ایک دن آئے گا پاکستان میں کوئی زکواۃ لینے والا نہیں ہو گا

ہم غریب ملکوں کی مدد کریں گے، یہ ہے میرا آئیڈیا ہے۔

 

متعلقہ خبریں