Daily Mashriq


ناتواں کندھوں پر بھاری ذمہ داری کا بوجھ، ٹیم کے دبئی میں ڈیرے

ناتواں کندھوں پر بھاری ذمہ داری کا بوجھ، ٹیم کے دبئی میں ڈیرے

لاہور:  آسٹریلیا سے سیریز کیلیے پاکستانی ٹیم نے دبئی میں ڈیرے ڈال دیے تاہم نوجوان پلیئرز کے ناتواں کندھوں پر بھاری ذمہ داری کا بوجھ عائد ہے۔

پی ایس ایل4 کا میلہ کوئٹہ گلیڈی ایٹرز کی پہلی ٹائٹل فتح کے ساتھ ختم ہوا، اب متحدہ عرب امارات میں انٹرنیشنل کرکٹ کا سلسلہ شروع ہونے والا ہے، پاکستان اور آسٹریلیا کے مابین ون ڈے سیریز کا آغاز جمعے کو شارجہ میں ہوگا۔

نام نہاد بھارتی سورماؤں کو گھر میں گھس کر3-2 سے زیر کرنے والی آسٹریلوی ٹیم بھرپور قوت سے گرین شرٹس کے حوصلے آزمائے گی، دوسری جانب پاکستان نے 6کرکٹرز کپتان سرفراز احمد، فخرزمان، بابراعظم، حسن علی، شاداب خان اور شاہین شاہ آفریدی کو آرام دینے کا حیران کن فیصلہ کیا ہے۔

جنوبی افریقہ کیخلاف سیریز کھیلنے والے اسکواڈ میں شامل حسین طلعت ڈراپ ہوئے،محمد حفیظ تاحال پی ایس ایل میں ہونے والی انگوٹھے کی انجری سے مکمل نجات پانے کے لیے کوشاں ہیں،میزبان ٹیم کی کمان شعیب ملک کو سونپی گئی ہے، جنوبی کرکٹر اینڈل فیلکوایو کیخلاف نسلی تعصب پر مبنی جملوں کے الزام پر سرفراز احمد کی معطلی کے بعد بھی آل راؤنڈر کو ہی کپتان بنایا گیا تھا، اس وقت 2ون ڈے اور 3ٹی ٹوئنٹی میچز گھر بیٹھ کر دیکھنے والے کپتان مزید 5مقابلوں میں قومی ٹیم کے ساتھ نہیں ہوں گے۔

آرام کرنے والے کھلاڑیوں کا خلا پُر کرنے کے لیے عمراکمل اور جنید خان کی واپسی ہوئی، انجری کی وجہ سے جنوبی افریقہ کے خلاف سیریز نہ کھیل پانے والے حارث سہیل کا بھی کم بیک ہوا، ون ڈے ڈیبیو کے منتظر عابد علی، سعد علی اور محمد عباس کو شامل کیا گیا ہے، پی ایس ایل میں دھوم مچانے والے نوجوان پیسر محمد حسنین کو بھی موقع ملے گا۔ سخت جان کینگروز پر قابو پانے کیلیے بڑی اکھاڑ پچھاڑ کے بعد تشکیل دیے جانے والے تجرباتی اسکواڈ نے متحدہ عرب امارات میں ڈیرے ڈال دیے ہیں۔

کپتان شعیب ملک پہلے سے ہی دبئی میں موجود تھے، امام الحق، عابد علی، فہیم اشرف اور عمر اکمل نے لاہور، محمد عامر اور محمد حسنین نے کراچی دیگر کرکٹرز نے اپنے شہروں سے یو اے ای کیلیے اڑان بھری، میزبان کرکٹرز بدھ کی شام 6سے رات 9بجے تک ٹریننگ سیشن میں صلاحیتوں کو نکھارنے کی کوشش کریں گے،سیریز ٹرافی کی تقریب رونمائی جمعرات کی شام 5 بجے شارجہ اسٹیڈیم میں ہوگی، دوسری جانب ہر طرح کے ہتھیاروں سے لیس آسٹریلوی ٹیم یواے ای میں تیاریاں جاری رکھے ہوئے ہے۔

ورلڈکپ کے مضبوط امیدواروں میں شامل بھارت کو زیر کرنے والے کینگروز کو عثمان خواجہ کی خدمات میسر ہیں، انھوں نے ون ڈے کیریئر کی دونوں سنچریاں اسی ٹور میں بنانے کے ساتھ 91 رنز کی ایک اننگز بھی کھیلی، پیٹر ہینڈز کومب نے بھی اسپنرز کے خلاف عمدہ کھیل سے اپنی افادیت ثابت کی، مارک اسٹوئنس اور گلین میکسویل بہتر کارکردگی دکھا رہے ہیں، ایشٹن ٹرنر کے جارحانہ 80رنز کی بدولت آسٹریلیا نے بھارت کیخلاف تاریخ کا سب سے بڑا 350سے زائد کا ہدف حاصل کر لیا تھا۔

کپتان ایرون فنچ فارم کے متلاشی ہیں، پیس بیٹری میں جھے رچرڈسن اور پیٹ کمنز بھرپور ردھم میں ہیں، اسپنر ایڈم زمپا ایشیائی کنڈیشنز سے بھرپور فائدہ اٹھانے کی صلاحیت رکھتے ہیں۔ پاکستان کی جانب سے برقرار رکھے جانے والے کھلاڑی ورلڈ کپ اسکواڈ میں جگہ پکی کرنے جبکہ نئے شامل ہونے والے موقع پانے کا عزم لیے میدان میں اتریں گے۔

متعلقہ خبریں