Daily Mashriq

400سالہ تاریخی چوہا گجر پل کے اطراف کچرے کے ڈھیر لگ گئے

400سالہ تاریخی چوہا گجر پل کے اطراف کچرے کے ڈھیر لگ گئے

پشاور(نامہ نگار)پشاور شہر کے کچرے نے تاریخی عمارات کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا400سال سے زائد تاریخی چوہا گجر پل کے اطراف کچرے کے ڈھیر لگ گئے جس سے نہ صرف زبوں حالی کا شکار چوہا گجر پل متاثر ہو رہا ہے بلکہ قریبی رہائشی علاقوں میں شہریوں کو بھی شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑرہا ہے ۔ پشاور میں کچرا ٹھکانے لگانے والے متعدد ادارے اسو قت ڈمپنگ سائٹ سے محروم ہیں ڈبلیو ایس ایس پی کے علاوہ ایک بھی ادارے کے پاس ڈمپنگ سائٹ موجود نہیں ہے جس کے باعث گلیوں اور دیگر علاقوں کا کچرا دیگر مقامات پر پھینک دیا جاتا ہے پشاور کے نواحی علاقے چوہا گجر میں بھی مختلف علاقوں کا کچرا پھینکا جا رہا ہے مذکوہ علاقے میں 400سال سے زائد قدیمی مغل پل کو بھی کچرے نے اپنی لپیٹ میں لے لیا ہے پل کے اطراف میں کچرے کے ڈھیر لگا دیئے گئے ہیں جس سے شدید بدبو اور تعفن پھیل گیاہے جبکہ تاریخی مقام کی خوبصورتی بھی مانند پڑ گئی مقامی آبادی کے مطابق کچرے سے بھری گاڑیاں روزانہ کی بنیاد پر کچرا اسی علاقے میں پھینک دیتی ہیں ڈرائیوروں کو منع کرنے کے باوجود بھی کچرا پھینکا جا رہا ہے اور اس متعلق کئی بار مقامی آبادی اور ڈرائیوروں کے مابین تلخ کلامی بھی ہوئی ہے۔

متعلقہ خبریں