Daily Mashriq


مہوش کے بعد عائشہ عمر’ تمغہ فخرِ پاکستان‘ ملنے پرتنقید کا نشانہ بن گئیں

مہوش کے بعد عائشہ عمر’ تمغہ فخرِ پاکستان‘ ملنے پرتنقید کا نشانہ بن گئیں

نامورپاکستانی اداکارہ مہوش حیات تمغہ امیتازملنے کے اعلان پرتنقید کا نشانہ بننے کے بعد اب اداکارہ وگلوکارہ عائشہ عمر ’’ تمغہ فخرِ پاکستان ‘‘ ملنے پر سوشل میڈیا صارفین کے نشانے پر آ گئیں ۔

ابھی مہوش حیات کو تمغہ امتیاز ملنے کا تنازعہ ختم نہیں ہوا تھا کہ ایک اور تنازعہ نے سر اٹھا لیا اس بار خوبرو پاکستانی اداکارہ وگلوکارہ و ماڈل عائشہ عمر تنقید کا نشانہ بنی ہیں۔ انہیں ’’ تمغہ فخرِ پاکستان ‘‘ ملنے پرشدید تنقید کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ حال ہی میں عائشہ عمر کو شوبز انڈسٹری میں 10 سالہ خدمات کے اعتراف میں ایک انٹرنیشنل فاؤنڈیشن کی جانب سے ’’ تمغہ فخرِ پاکستان ‘‘ اور’’گلوبل وومن ایوارڈ‘‘ سے نوازا گیا ہے۔ عائشہ عمر نے یہ خبر سوشل میڈیا پر شیئر کرکے اپنی خوشی اپنے چاہنے والوں کے ساتھ شیئرکرتے ہوئے  فاؤنڈیشن کی انتظامیہ کا شکریہ ادا کیا اورکہا کہ میں اپنے ملک کے لیے اسی طرح فخر کا باعث بنتی رہوں گی۔

تاہم سوشل میڈیا صارفین کو عائشہ کو ’’ تمغہ فخرِ پاکستان ‘‘ ملنا ہضم نہیں ہورہا اور انہوں نے مہوش حیات کی طرح عائشہ عمر کو بھی یہ اعزاز ملنے پر آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ عائشہ عمر بطور ماڈل اچھی ہے پر یہ اس ایوارڈ کے قابل نہیں، کوئی ایک کام بتادو عائشہ کا جس کی وجہ سے انہیں اس ایوارڈ سے نوازا گیا ہے شرم کی بات ہے۔

کچھ صارفین نے عائشہ عمرکے ساتھ مہوش حیات کوبھی تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا پہلے مہوش اور اب عائشہ ، ایسا کیا کیا ہے دونوں نے کہ انہیں اعزازات سے نوازا جارہاہے۔ دلچسپ بات یہ ہے کہ کچھ لوگوں کو عائشہ عمر کے ایوارڈ لینے پر نہیں بلکہ ان کے لباس پر اعتراض ہوا اورانہوں نے لباس پر تنقید کرتے ہوئے کہا اگر ایوارڈ لینا ہی تھا تو کم از کم پاکستانی لباس پہن کر جاتی لیکن ان لوگوں کو تو مغرب کی ہوا لگی ہوئی ہے۔

تاہم جہاں کچھ لوگوں نے عائشہ پر تنقید کی وہیں ان کے چاہنے والوں نے انہیں اس ایوارڈ سے نوازے جانے پر مبارکباد دی اور کہا آپ اس ایوارڈ کی حقدار تھیں اسی لیے یہ اعزاز آپ کو دیا گیا۔

متعلقہ خبریں