Daily Mashriq

اپنی محبت واپس لو

اپنی محبت واپس لو

ہر کمالے را زوال است، ہر عروج کو خروج ہے بالکل اس طرح جیسے ہر دن شام میں ڈھلنے کے بعد رات کی آغوش میں جا کر شب تاریک کی چادر اوڑھ لیتا ہے۔ بس اچھی یا بری یادیں رہ جاتی ہیں بیتے ہوئے دن کی جو لاشعور کی تختی پر نقش ہوکر بند یا جاگتی آنکھوں کے خواب بن جاتی ہیں اور کبھی کبھی اتنا تڑپاتی ہیں کہ شاعر چیخ چیخ کر پکار اُٹھتا ہے کہ

یاد ماضی عذاب ہے یا رب

چھین لے مجھ سے حافظہ میرا

یہی کچھ ریڈیو پاکستان کیساتھ ہوا۔ کسی زمانے میں ملک کے اندر اور ملک سے باہر ریڈیو پاکستان کا طوطی بولتا تھا کیونکہ ریڈیو پاکستان اپنے سننے والوں کے دل جیت کر ان کو اپنا گرویدہ ہی نہیں مجنون بناتا رہا، ہمیں وہ زمانہ اچھی طرح یاد ہے جب ریڈیو پاکستان کے شیدائی اپنے ریڈیو سیٹ کو دلہن کی طرح سجا کر گلے میں لٹکائے گھوما کرتے تھے۔ریڈیو اور ریڈیو سیٹ کیساتھ اتنا زیادہ پیار کرنے کی اگر کوئی وجہ تھی تو بس اتنی سی تھی کہ ان دنوں تفریح اور معلومات کا یہی ایک ذریعہ تھا جو ریاست کی آواز یا اس کا ترجمان بن کر ہر ایک کی دسترس میں پہنچ کر انہیں ’’آواز کی دنیا کے دوستو‘‘ کہہ کر مخاطب کرتا اور ان کے ذوق سماعت کی تواضع کرنے میں کوئی کسر روا نہ رکھتا۔ ہمیں وہ زمانہ بھی یاد ہے جب دن بھر کے تھکے ہارے لوگ اپنے گھروں میں پہنچ کر اپنے ریڈیو سیٹ کا سوئچ محض اس لئے آن کرتے کہ آج ان کے پسندیدہ فرمائشی پروگرام نے آن ایئر آکر ان کے دلوں کے تار کو چھیڑنا ہوتا ان کے روح کی غذا کا اہتمام کرنا ہوتا، ان کی دن بھر کی تھکاوٹ کو کوسوں دور بھگانا ہوتا۔ ہم نہیں بھول سکتے وہ دن اور رات جب اپنی گلی یا محلہ کے ہر گھر سے آنے والی ریڈیائی آواز میں نغموں کی فرمائش کرنے والوں کی طولانی فہرست پڑھ کر سنائی جاتی اور ساتھ ہی یہ بھی بتایا جاتا کہ کون کس مقام سے گیت سننے کی فرمائش کر رہا ہے۔ کیا عالم تھا شوق سماعت کا اور کتنا اونچا معیار تھا ریڈیو سے نشر ہونے والے ان پروگراموں کا، نہ صرف فرمائشی پروگرام بلکہ ریڈیائی فیچرز، ڈرامے، خبریں، مختلف طبقات فکر کیلئے نشر کئے جانے والے خصوصی پروگرام جن میں مذہبی پروگراموں کے علاوہ زمیندار بھائیوں کیلئے پروگرام، خواتین کیلئے تیار کئے جانیوالے پروگرام، بچوں کے پروگرام، کمرشل پروگرام اور بہت کچھ ریکارڈ ہوکر عمرو عیار کی زنبیل کی طرح اس کی آڈیو لائبریریوں میں محفوظ ہوتا رہتا، کہنے کو تو ریڈیو پاکستان کی اتنی ہی عمر ہے جتنی مملکت خداداد پاکستان کی اپنی عمر،14اکست1947 کو رات کے بارہ بجے ’’یہ ریڈیو پاکستان ہے‘‘ کے جملے نے آل انڈیا ریڈیو کی کایا پلٹ کر رکھ دی اور یوں ہوا کے دوش پر اُڑنے والی یہ تاریخ ساز خبر قریہ قریہ خوشیوں کی پھل جھڑیاں چھوڑنے لگی۔ وہ جو کل تک کہہ رہے تھے کہ ’دال اور روٹی کھائیں گے پاکستان بنائیں گے‘ یا وہ جن کا ایمان افروز نعرہ ’’پاکستان کا مطلب کیا لا الہ الاللہ‘‘ تھا۔ بے اختیار ہوکر ’پاکستان بنانیوالو پاکستان مبارک ہو‘ کہنے لگے۔ ریڈیو پاکستان پشاور ان دو تین ریڈیو سٹیشنوں میں سے ایک ہے جو1936میںآل انڈیا ریڈیو پشاور کے نام سے وجود میں آیا تھا، پاکستان بننے کے بعد اسے بھی ریڈیو پاکستان پشاور کا حوالہ مل گیا، جس رات ہوا کے دوش پر پاکستان بننے کا نشریہ جاری ہوا وہ رمضان المبارک کی ستائیسویں رات تھی۔ہماری ایک خالہ نے ہمیں بتایا کہ اس رات ہم اعتکاف کی نیت کرکے اپنے مکان کے ایک گوشہ میں بیٹھے ہوئے تھے، ریڈیو سے نشر ہونے کے بعد گلی گلی نعرے بن کر گونجنے والا یہ اعلان سن کر ہم بے اختیار سجدہ شکر بجا لانے لگے۔ رمضان المبارک کی ستائیسویں رات نزول کلام مجید کی رات ہے اور یہی رات آل انڈیا ریڈیو کا جوا اتار پھینکنے کے علاوہ ریڈیو پاکستان کا حوالہ بنی، ریڈیو ارتقاء کی منازل طے کرتا رہا لیکن اس کا تنزل جنرل ضیاء کے دور میں شروع کی جانیوالی نئی طرز نشریات سے شروع ہوا، جس میں ریکارڈنگ پر اٹھنے والے اخراجات کو کم کرنیکی غرض سے لائیو پروگراموں کو رواج دیا گیا، لیکن اس سے زیادہ ظلم اس وقت روا رکھا جانے لگا جب نجی ریڈیو سٹیشنوں کے علاوہ نجی ٹیلی ویژن کے چینلوں کا طوفان بلاخیز ریڈیو پاکستان کی جڑوں کو کھوکھلا کرنے لگا، کسی زمانے میں ریڈیو سیٹ رکھنے والے لائسنس فیس کی ادائیگی کے بعد ریڈیو سیٹ رکھنے کے مجاز تھے، اس کے علاوہ کمرشل پروگرامز ریڈیو کی آمدن کا بہت بڑا ذریعہ تھے لیکن عہدحاضر میں نہ صرف اس کی آمدن کے ذرائع مفقود ہوگئے ہیں بلکہ آمدن کی نسبت اخراجات کی بھرمار نے اس ادارے کا خزانہ خالی کرکے رکھ دیا ہے جسکے نتیجے میں ریڈیو پاکستان ایبٹ آباد کی بندش کا اشو سامنے آیا ہے، اہل نظر کیلئے ریڈیو پاکستان ایبٹ آباد کی بندش ایک سانحہ سے کم نہیں اور یوں لگ رہا ہے جیسے ریڈیو پاکستان اپنے چاہنے والوں کو اس کا جواز پیش کرتے ہوئے کہہ رہا ہو

اب نزع کا عالم ہے اپنی محبت واپس لو

جب کشتی ڈوبنے لگتی ہے تو بوجھ اُتارا کرتے ہیں

متعلقہ خبریں