Daily Mashriq

اوگی،دربندمیں نیم مردہ حالت میں کنویںسے ملنے والی بچی جاں بحق

اوگی،دربندمیں نیم مردہ حالت میں کنویںسے ملنے والی بچی جاں بحق

اوگی(نامہ نگار)دربندکے علاقہ کی چارروزقبل لاپتہ ہونے والی ڈیڑھ سالہ معصوم جنت نوربی بی نیم مردہ حالت میں خشک کنویںسے ملنے کے کچھ دیر بعدجاں بحق ہوگئیں،پھول جیسی جنت کی نعش پوسٹ مارٹم کیلئے تین گھنٹے اوگی کے کیٹگری ڈی ہسپتال میں بے یارودمددگارپڑی رہی ،مگرچار لیڈی ڈاکٹرز میںکسی ایک لیڈی ڈاکٹرنے ہسپتال آکرپوسٹ مارٹم کی زحمت گوارانہیں کی اوربعدمیں ہسپتال کے انچارج نے مانسہرہ میں پوسٹ مارٹم کیلئے لواحقین کوپروانہ تھمادیا،تفصیلات کے مطابق دربندمیں چار روز قبل پیر کے دن ایک بجے گھر کے باہر کھیلتے ہوئے ڈیڑھ سالہ جنت بی بی دخترنزاکت غائب ہوئی جمعرات کے روز گھر سے تھوڑی دور ایک بیس فٹ گہرے خشک کنویں سے رونے کراہنے کی آوازیں آئیں، آواز کے تعاقب میں جب مالک گیا تو دیکھا بچی پڑی ہوئی ہے اُس نے فوری طور پر تھانہ دربند کو اطلاع دی۔تھانہ دربند کی ٹیم نے موقع پر پہنچ کر مقامی افراد کی مدد سے بچی کو رسوں کے باہرنکالا، ریسکیو میں ایک گھنٹہ سے زائد وقت لگا۔ ریسکیو آپریشن کے فوراً بعد طبی امداد کے لئے بچی کو دربند آر ایچ سی لے جایا گیا جہاں بچی کو طبی امداددی گئی مگر شدید سردی اورکافی دیر سے گڑھے میں موجودگی کے باعث بچی کی حالت سنبھل نہیں رہی تھی جس پراُسے مانسہرہ ریفر کیا گیا مگر معصوم بچی جنت اوگی کے قریب ہی دم توڑ گئی،لواحقین پوسٹ مارٹم کیلئے بچی کی نعش کوکیٹگری ڈی ہسپتال اوگی لائے ،لیکن تین گھنٹوں تک وہ دربدرکی ٹھوکریں کھاتے رہے،ڈی ایس پی اوگی ابرارخان اورڈاکٹرسجادبھی لیڈی ڈاکٹرزکی تلاش میں سرگرداں رہے لیکن کوئی لیڈی ڈاکٹرپوسٹ مارٹم کیلئے نہیں آئی جس پرمجبوراً غمزدہ ماں کوبچی کی نعش اٹھائے پوسٹ مارٹم کیلئے مانسہرہ ڈی ایچ کیوجاناپڑا،لوگوں نے کیٹگری ڈی ہسپتال کے لیڈی ڈاکٹرکی غفلت لاپرواہی پرشدیداحتجاج کیااوروزیراعلی سے اس واقعہ کانوٹس لیکرسخت ایکشن لینے کامطالبہ کیاہے۔

متعلقہ خبریں