Daily Mashriq

عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی رکوائے

عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں مسلمانوں کی نسل کشی رکوائے

عالمی تنظیم جنیو سائیڈ واچ کا مقبوضہ کشمیر میں نسل کشی کا الرٹ جاری کرنا اور مقبوضہ کشمیر میں بڑے پیمانے پر قتل عام کے خطرے اور خدشات کا اظہار عالمی برادری کے لئے لمحہ فکریہ ہے۔ محولہ تنظیم نے مقبوضہ کشمیر میں خاص طور پر مسلمانوں کی نسل کشی کے خطرے کی روک تھام کی بھی اپیل کی ہے جو عالمی برادری اور خاص طور پر امت مسلمہ اور پاکستانیوں کے لئے مزید اور فوری توجہ کا باعث امر ہے۔ امر واقع یہ ہے کہ بھارت نے مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت تبدیل کرتے ہوئے جس بڑے پیمانے پر فوج تعینات کی ہے اور ہر دس کشمیری پر ایک فوجی تعینات ہے اس کا مقصد مظالم ڈھانا اور مقبوضہ کشمیر کے عوام پر بزور بندوق اپنا تسلط جمانا ہے جس سے صورتحال کی سنگینی فطری امر ہے۔ یہ کوئی راز کی بات نہیں کہ بھارت میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں کررہا ہے ،تشدد اور جنسی زیادتی کے واقعات عام ہیں ، وادی میں مسلمانوں کو دہشتگرد اور علیحدگی پسند بنادیا گیاہے۔بھارت قتل عام کی جانب بڑھ رہا ہے ۔بھارتی فوج 2016سے اب تک70ہزار کشمیری شہید کرچکی ہے، مقبوضہ کشمیر میں مواصلاتی نظام اور انٹرنیٹ بند ہے، مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیاں جاری ہیں، مقبوضہ کشمیر میں تشدد اور جنسی زیادتی کے واقعات عام ہیں۔ کشمیر میں جرم کے بغیر دوسال تک قید کے واقعات عام ہیں، مسلمان حریت رہنما گرفتار یا نظر بند ہیں۔ مقبوضہ وادی میں1990تک ہندوپنڈت معاشی طور پرحاوی تھے، بی جے پی نے ہندووں کو مقبوضہ کشمیر میں دوبارہ مضبوط کیا، وادی میں مسلمانوں کو دہشتگرد، شرپسند، علیحدگی پسند بنا دیا گیا۔مودی اور بی جے پی مسلسل مسلم مخالف نفرت کو ہوا دے رہے ہیں۔ مسلمانوں کو جلا وطن کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔ اس ساری صورتحال میں اقوام متحدہ اور رکن ممالک کی ذمہ داری بنتی ہے کہ وہ اس ضمن میں خاموشی توڑ کر بھارت کو اس ظالمانہ اقدام سے روکنے کے لئے آگے آئیں۔ ہم سمجھتے ہیں کہ اصل صورتحال کرفیو کے ہٹنے کے بعد ہی سامنے آئے گی۔ اس صورتحال میں مقبوضہ کشمیر میں مظالم پر دنیا بھر کے مسلمانوں اور خاص طور پر پاکستانی بھائیوں کی جانب سے اپنے مظلوم بھائیوں کو بھارتی مظالم سے نجات دلانے کے لئے جہاد کاراستہ اختیار کرنے کا اعلان فطری امر ہوگا۔ اس وقت بھی یہ آوازیں اٹھ رہی ہیں ماضی میں پاکستانی بھائی کشمیر میں جہاد کرچکے ہیں اوراب بھی اس کے لئے پوری طرح تیار ہیں۔ اگر صورتحال یہی رہی اور اقوام عالم نے خاموشی اختیار کئے رکھی تو مقبوضہ کشمیر کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد اب وہاں جہاد بین الاقوامی اصولوں کی بھی خلاف ورزی کی بات نہ ہوگی لیکن اس ساری صورتحال کے پاکستان حکومت پر جو اثرات مرتب ہوں گے وہ مشکل صورتحال ہوگی اس لئے اس ضمن میں جوش کی بجائے ہوش کا مظاہرہ کرتے ہوئے صبر و تحمل سے کام لینا بہتر ہوگا۔ اگر عالمی برادری اور امت مسلمہ کاکردار یہی رہا تو پھر حکومت کے لئے بپھرے عوامی جذبات پر قابو پانا ممکن نہ ہوگا۔ بھارت اس تاک میں ہے کہ کسی طرح سے اس قسم کا کوئی بہانہ اس کے ہاتھ لگے جسے پیش کرکے وہ دنیا کے سامنے اپنے مظالم اور فوج تعینات کرنے کے عمل کا دفاع کرسکے۔ بھارت کسی بھی جذباتی صورتحال سے فائدہ اٹھانے کے لئے پوری طرح تیار ہے۔ صورتحال کا تقاضا ہے کہ مقبوضہ کشمیر کے مسئلے کا سفارتی حل تلاش کیا جائے اور جلد سے جلد مسلمانوں کی ممکنہ نسل کشی کی روک تھام کے لئے عالمی برادری حرکت میں آئے۔ بھارتی فوج کی جگہ عالمی امن فورس تعینات کی جائے اور مسئلہ اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق مستقل طور پر حل کیا جائے۔

مداخلت بے جا سے گریز کی ضرورت

قبائلی اضلاع کے امور میں شفافیت لانے کے نام پر ان اضلاع کے معاملات کو چوں چوں کا مربہ نہ بنایا جائے تو بہتر ہوگا۔ فاٹا کی خصوصی حیثیت کے خاتمے کے بعد قبائلی اضلاع کا انتظام و انصرام صوبائی حکومت کے مکمل دائرہ اختیار میں آچکا ہے اور وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا صوبے کے چیف ایگزیکٹو کی حیثیت سے ان اضلاع کے ضمن میں فیصلے کرنے میں مختار ہیں ایسے میں مختلف اطراف اور ذرائع سے بالواسطہ طور پر کوئی بھی اقدام صوبائی حکومت کے معاملات میں مداخلت متصور ہوگا جس سے گریز کرنے کی ضرورت ہے۔ قبائلی اضلاع کو صوبائی اسمبلی میں نمائندگی ملنے‘ ان کے نمائندوں کا اسمبلی میں اپنے علاقوں کے مسائل و معاملات پیش کرنے اور ممکنہ طور پر صوبائی کابینہ میں نمائندگی کے بعد کسی متوازی انتظام کی ضرورت نہیں۔ قبائلی اضلاع کے امور میں شفافیت لانے کے لئے کسی کمیٹی کے قیام کی بجائے عوامی نمائندوں کو اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے کا آزادانہ موقع دیا جائے۔ جہاں تک شفافیت کی بات ہے شفافیت کی ضرورت صرف قبائلی اضلاع ہی کے معاملات میں نہیں سارے حکومتی معاملات میں شفافیت کا خیال رکھنا اور اسے یقینی بنانے کی ضرورت ہے۔

متعلقہ خبریں