شبلی فراز کے گھر ''چوری''

شبلی فراز کے گھر ''چوری''

تحریک انصاف کے لیڈر شبلی فراز کے گھرچوری بادی النظر میں معمولی چوری کی واردات دکھائی نہیں دیتی۔ کیونکہ شبلی فراز نے اس واردات میں نقدی ' زیورات کی چوری کی بجائے بتایا ہے کہ ان کے گھر سے جائیداد کے کاغذات ، انکم ٹیکس کی ریٹرنز اور احمدفراز ٹرسٹ کی دستاویزات چرا ئی گئی ہیں۔ خود شبلی فراز نے اس واردات کو چھاپہ قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ جس نے بھی یہ کارروائی کی ہے اس نے انہیں بلیک میل کرنے کے لیے یہ کام کیا ہے۔ یہ کارروائی یا تو کسی سرکاری خفیہ کاری کے ادارے کی لگتی ہے یا ان کے سیاسی مخالفین کی کارگزاری لگتی ہے جن کا مقصد ان دستاویزات سے شبلی فراز کے خلاف کوئی موادحاصل کرنا ہو سکتاہے۔ جہاں تک ان دستاویزات کاتعلق ہے امکان ہے کہ ان میں سے بیشتر کی نقول متعلقہ سرکاری اداروں سے حاصل کی جا سکتی ہیں۔ امیدہے کہ شبلی فراز یہ کام کر لیں گے۔ تاہم یہ نقول نقول ہی ہوں گی یہ وثوق سے نہیں کہا جا سکتا کہ انہیں اصل دستاویزات کی حیثیت حاصل ہو گی یا نہیں۔ شبلی فراز نے کہا ہے کہ جس نے بھی یہ حرکت کی ہے اسے مایوسی ہو گی کیونکہ ان دستاویزات سے ان کے خلاف کوئی ثبوت حاصل نہیں کیے جا سکیں گے کیونکہ ان کا دامن صاف ہے۔ چوری کی واردات کرنے والوں یا بقول شبلی فراز چھاپہ مارنے والوں نے ان کی انکم ٹیکس ریٹرنز اور جائیداد کے بارے میں دستاویزات تو چلئے ان کے خلاف کوئی مواد اکٹھا کرنے کے لیے چرائیں ، لیکن ملک کے مایہ نازشاعر احمد فرازمرحوم کے نام سے قائم ٹرسٹ کے کاغذات کی چوری ایسی حرکت ہے جسے مہذب معاشرے میں قابلِ برداشت قرار نہیں دیا جا سکتا۔ امید کی جانی چاہیے کہ اربابِ اختیار فوری طور پر اس ''چوری'' کا نوٹس لیں گے اور غائب ہونے والی دستاویزات کی بازیابی کے فوری احکام جاری کریں گے۔

اداریہ