Daily Mashriq


وزیرداخلہ کی سکیورٹی صورتحال پروزیراعلیٰ پختونخواسے ملاقات

وزیرداخلہ کی سکیورٹی صورتحال پروزیراعلیٰ پختونخواسے ملاقات

پشاور(مشرق نیوز)وزیر داخلہ پاکستان اعجاز شاہ نے آج وزیراعلیٰ ہائوس پشاور میں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا محمود خان سے ملاقات کی۔ملاقات میں سیکیورٹی کے حوالے سے باہمی امور اور امن وامان کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ملاقات میں وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے ضم شدہ اضلاع و صوبائی حکومت کے ترجمان اجمل وزیر اورانسپکٹر جنرل پولیس خیبرپختونخوا ڈاکٹر محمد نعیم خان بھی موجود تھے۔ اس موقع پر دونوں اطراف سے ایک دوسرے کیلئے شیلڈ کا تبادلہ بھی کیا گیا۔علاوہ ازیںوزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان سے حبیب بینک لمیٹڈ کے صدر اورچیف ایگزیکٹو آفیسر محمد اورنگزیب نے وزیراعلیٰ ہاؤس پشاور میں ملاقات کی۔ ملاقات میں حبیب بینک لمیٹڈ کے صوبے میں نیٹ ورک ، ضم شدہ اضلاع میں موجود برانچز، صوبائی حکومت کے ساتھ بینک کے ممکنہ تعاون اور باہمی دلچسپی کے دیگر امورپر تبادلہ خیال کیا گیا ۔ وزیرخزانہ تیمور سلیم جھگڑا، وزیراعلیٰ کے مشیر برائے توانائی و بجلی حمایت اللہ خان اور وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ بھی اس موقع پر موجود تھے۔ محمد اورنگزیب نے وزیراعلیٰ کوبتایا کہ صوبے میں ایچ بی ایل کی دو سو برانچز کام کر رہی ہیں، ضم شدہ اضلاع میں سولہ برانچز ہیں، جن کو مکمل طور پر فعال بنانے کے لئے کام جاری ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع میں بینک کی برانچز زیادہ کرنے کی ضرورت ہے ، بینک نئے اضلاع میں نوجوانوں کو قرضوں کی فراہمی یا جوبھی تعاون کرسکتا ہے اسے کرنا چاہئیے کیونکہ ضم شدہ اضلاع کے عوام گزشتہ پینتیس سالوں سے بڑی تکالیف اور مصائب کا شکا ررہے ہیں۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ ضم شدہ اضلاع کو ترقی اور خوشحالی کے قومی دہارے میں لانا حکومت کی اولین ترجیح ہے ۔ وزیراعلیٰ نے واضح اور نتیجہ خیز اہداف کے تحت بینک کے ساتھ باہمی شراکت اور سرمایہ کاری کی ضرورت سے اتفاق کیا، انہوں نے اس مقصد کے لئے بینک اورمتعلقہ صوبائی محکموں خصوصاً محکمہ توانائی کے اعلیٰ حکام کو آپس میں بیٹھ کرلائحہ عمل طے کرنے کی ہدایت کی ۔ اس موقع پر خیبرپختونخوا کے توانائی کے شعبے میں سرمایہ کاری کے مواقع کا خصوصی تذکرہ کیا گیا ، محمد اورنگزیب نے صوبے میں سرمایہ کاری کے لئے خصوصی دلچسپی اور عزم کا اظہار کیا۔

متعلقہ خبریں