Daily Mashriq


بھارت کا مضحکہ خیز دعویٰ

بھارت کا مضحکہ خیز دعویٰ

بھارت اپنی روایتی ہٹ دھرمی اور سی پیک کے خلاف سازشوں سے باز نہیں آتا۔چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے پر اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے بھارت نے یہ مضحکہ خیز دعویٰ کیا ہے کہ یہ منصوبہ ہماری خودمختاری کے خلاف ہے۔بھارتی میڈیا کے مطابق سیکرٹری خارجہ ایس جے شنکر نے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چین کو یہ وضاحت دینی ہو گی کہ بھارت کس طرح سے بیجنگ میں منعقد ہونے والی سمٹ میں حصہ لے سکتا ہے جب سی پیک منصوبہ آزاد کشمیر سے ہو کر گزرتا ہے جو ہماری خود مختاری کی خلاف ورزی ہے۔جہاں تک سی پیک منصوبے کو بھارت کے مفادات کے خلاف قرار دینے کا تعلق ہے اس حوالے سے بھارت کے دعوے کو مضحکہ خیز ہی قرار دیا جا سکتا ہے کیونکہ بھارت اس مفروضے کے تحت کہ کشمیر بھارت کا اٹوٹ انگ ہے اور اس حوالے سے اس کا دعویٰ پورے کشمیر پر محیط ہے جبکہ ماضی میں مسئلہ کشمیر پر مذاکرات کے حوالے سے وہ یہ مطالبات بھی کرتا رہا ہے کہ پاکستان آزاد کشمیر کو بھی اس کے حوالے کر دے کیونکہ مقبوضہ کشمیر کی اسمبلی نے بھارت کے ساتھ الحاق کا فیصلہ کیا ہے جو منطقی اور اخلاقی طور پر قابل قبول ہے ہی نہیں کیونکہ اقوام متحدہ کی قراردادوںکے مطابق کشمیر کے مستقبل کا فیصلہ حق خوداختیاری کے تحت دونوں جانب کے کشمیری عوام نے ہی کرنا ہے جبکہ مقبوضہ کشمیر کی جس اسمبلی کے الحاق کشمیر کے فیصلے کا تعلق ہے وہ ایک کٹھ پتلی اسمبلی تھی جس کے فیصلوں کی آج تک خود مقبوضہ جموں و کشمیر کے عوام نے بھی توثیق نہیں کی اور آج بھی وہاں آزادی کی تحریک اسی طرح جاری و ساری ہے اس لئے بھارت کن اصولوں کی بنیاد پر سی پیک کو اپنی خودمختاری کے خلاف قرار دیتا ہے۔ جہاں تک بھارت کے بیجنگ میں ہونے والی سمٹ میں حصہ لینے کا تعلق ہے اس حوالے سے چین زیادہ بہتر طور پر اس سوال کا جواب دینے کی پوزیشن میں ہے تاہم چونکہ یہ اقتصادی راہداری بھارت کے اندر سے کہیں بھی نہیں گزرتی اس لئے متعلقہ سمٹ میں بھارت کی شرکت بے معنی ہے البتہ جس طرح بھارت کو مشروط طور پر اس راہداری منصوبے میں شرکت کر کے اپنی تجارتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کی دعوت دی جا چکی ہے اگر بھارت چاہے تو اس منصوبے کے خلاف اپنی سازشیں ترک کر کے اور پاکستان میں دہشت گردی کی سرپرستی سے ہاتھ کھینچ کر اقتصادی راہداری سے استفادہ کر سکتا ہے۔ یوں اس کے یہ خدشات بھی ختم ہو جائیںگے کہ بقول اس کے یہ منصوبہ مخصوص اقدام کا حصہ ہے۔کیونکہ راہداری سے وسط ایشیائی ریاستوں اور روس تک اس کے تجارتی قافلے نقل و حمل کریں گے تو اس پر واضح ہو سکے گا کہ یہ راہداری صرف اقتصادی اور تجارتی سرگرمیوں کو فروغ دینے کے لئے تعمیر کی جا رہی ہے۔

مردم شماری اور فاٹا کے بے گھر خاندان

فاٹا میں مردم شماری کے طریقہ کار پر قائمہ کمیٹی برائے ریاستیں و سرحدی امور کے سخت تحفظات پر وفاقی ادارہ شماریات ، فاٹا سیکر ٹریٹ اور قائمہ کمیٹی کا جلد مشترکہ اجلاس طلب کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔ ملک میںہونے والی خانہ شماری اور مردم شماری کے حوالے سے ایک جانب تو بلوچستان کی سیاسی قیاد ت کو تحفظات ہیں ، دوسری جانب بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کو بھی مردم شماری میں شامل کرنے کے مطالبات سامنے آرہے ہیں جبکہ تیسری جانب فاٹا کے ان علاقوں میں جہاں دہشت گردی کے خلاف آپریشن کی وجہ سے اپنے گھروں کو چھوڑ کر ملک کے دوسرے علاقوں میں پناہ لینے والے قبائلی عوام کی مردم شماری کے حوالے سے بھی سوال اٹھ رہے ہیں ، اس حوالے سے چیف سیفران نے بے گھر ہونے والے خاندانوں کو جہاں موجودہیں کی بنیاد پر شمار کرنے کی جو بات قائمہ کمیٹی برائے سیفران میں کی ہے ، یہ قابل قبول تو ضرور ہے تاہم یہ بھی ضروری ہے کہ ان بے گھر خاندانوں کی تفصیل درج کرتے وقت ان کے آبائی علاقوں کا اندراج بھی لازمی قرار دیا جائے ۔اس لئے کہ رائے شماری کا مقصد صرف یہ نہیں ہے کہ آبادی کا تخمینہ لگا یا جائے بلکہ با لا خر ان لوگوں نے امن کے قیام کے بعد اپنے علاقوں میں واپس جاکر بسنا ہی ہے ، اور ظاہر ہے قومی وسائل کی تقسیم کا منصفانہ طریقہ یہی کہ ہے ہر صوبے کو اس کی آبادی کے حوالے سے جائز حصہ دیا جائے تاہم بد قسمتی سے صوبہ خیبرپختونخوا کی سیاسی قیادت خیبر پختونخوا اور فاٹا کے علاقوں میں مردم شماری کے حوالے سے شدید تحفظات کا اظہار کر رہی ہے ۔ جبکہ فاٹا کے صوبہ خیبر پختونخوا میں انضمام کیلئے بھی آوازیں اٹھ رہی ہیں ، یوں اگر فاٹا کے خاندانوں کو جہاں ہیں کی بنیاد پر مردم شماری میں اندراج کا حق دیا جائے گا تو کہیں ایسا نہ ہو کہ ان کے اندراج کے حوالے سے ان کا شمار عارضی رہائش کے علاقوں میں ہو جائے ، اس لئے ضروری ہے کہ اس ضمن میں ہر ضروری احتیاط سے کام لیکر ان کو اصل رہائشی علاقوں کے رہائشی ظاہر کیا جائے ، وگرنہ آنے والے دنوں میں جب یہ لوگ واپس انے علاقوں میں چلے جائیں گے تو وسائل کی تقسیم کے حوالے سے کئی قسم کے مسائل جنم لیں گے ۔

متعلقہ خبریں