Daily Mashriq


اک گام احتیاط

اک گام احتیاط

ایک نوزائیدہ تنظیم کی سرگرمیوں پر وفاقی حکومت کی فاٹا سیکرٹریٹ سے رپورٹ طلبی کی حکمت حکمران کوہی معلوم ہوگی لیکن ان کی جانب سے یہ ہدایت قابل تحسین ہے جس میں مستقبل میں اس قسم کے احتجاج سے بچنے کیلئے تمام قبائلی ایجنسیوں کی انتظامیہ کو لوگوں کے مسائل مقامی سطح پر حل کرنے کی بھی ہدایت جاری کردی گئی ہے۔محولہ تنظیم کے زیادہ تر مطالبات ٹی ڈی پیز کی باعزت واپسی اور بحالی جیسے مطالبوں پر مبنی ہیں جن کی اصابت اور ان کو حل کرنے کی وکالت میں کوئی حرج نہیں۔ امر واقع یہ ہے کہ اس تنظیم نے کراچی میں قبائلی نوجوان کی پولیس کے ہاتھوں موت کے بعد احتجاج سے لوگوں کی توجہ حاصل کرلی جس کے بعد میڈیا کی توجہ کا حصول فطری امر تھا جبکہ سوشل میڈیا پر بھی تنظیم خاصی فعال ہے لیکن اس کی آڑ میں سوشل میڈیا پر بعض اوقات ایسے بھی فلمبند مناظر ڈالے جاتے ہیں جس کی گنجائش نہیں ان کو پروپیگنڈے اور فضا کو مکدر کرنے کی سازش کے طور پر ہی دیکھا جانا چاہئے۔ اس امر کا جائزہ بہر حال لیا جانا چاہئے کہ محولہ تنظیم کے بظاہر بے ضرر اور جائز مقاصد کے پس پردہ کوئی پوشیدہ ایجنڈا تو نہیں۔ سب سے موزوں طریقہ یہ نظر آتا ہے کہ جتنے بھی جائز مطالبات اور مشکلات ہیں اگر فوری ممکن ہے تو ا ن کا خاتمہ کیا جائے اور اگر کچھ غلط فہمیاں اور مشکلات ہیں تو ان پر بات چیت ہونی چاہئے تاکہ ہمدردی کی آڑ میں پروپیگنڈے اور ممکنہ پوشیدہ مقاصد کے حصول کی گنجائش ہی باقی نہ رہے۔

متعلقہ خبریں