Daily Mashriq

اسلام مخالف کارروائیاں کسی صورت قبول نہیں: وزیراعظم عمران خان

اسلام مخالف کارروائیاں کسی صورت قبول نہیں: وزیراعظم عمران خان

اسلام آباد: وزیراعظم عمران خان نے ناروے میں توہین قرآن کے واقعے کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسلام مخالف کارروائیاں کسی صورت قبول نہیں کی جائیں گی۔

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کی کور کمیٹی کا اجلاس ہوا جس میں ملکی سیاسی اور معاشی صورتحال کا جائزہ لیا گیا۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نے ناروے میں مسلمانوں کے جذبات مجروح کرنےکے واقعے کی شدید مذمت کی اور وزارت خارجہ کو  اسلامی ممالک کی تنظیم (او آئی سی) سے رابطہ کرنے کی ہدایت کی۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزارت خارجہ ناروے واقعے پر اوآئی سی کو ہنگامی اجلاس بلانے کیلئے خط بھی لکھے گی۔

 اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ ناروے واقعہ اسلامو فوبیا کی ایک تازہ مثال ہے لیکن اسلام مخالف کارروائیاں کسی صورت قبول نہیں کریں گے۔

اجلاس میں پاکستان تحریک انصاف (پی ٹی آئی) کے خلاف فارن فنڈنگ کیس پر بریفنگ دی گئی، اس حوالے سے بابر اعوان کو اہم ٹاسک بھی دیا گیا۔

ذرائع کے مطابق کور کمیٹی ارکان نے پنجاب حکومت کے انتظامی امور پر تحفظات کا اظہار کیا۔

ناروے میں قرآن پاک کی بے حرمتی روکنے والے الیاس کو ترجمان پاک فوج کا سلام

یاد رہے کہ گزشتہ دنوں ایک اسلام مخالف تنظیم سے تعلق رکھنے والے شخص نے ناروے کے کرستیان ساند شہر کے پر رونق علاقے میں پہلے ایک مجمع لگایا اور پھر لوگوں کے سامنے قرآن کریم کو نذر آتش کر کے مسلمانوں کے جذبات کو مجروح کیا۔

مسلمانوں کی مقدس کتاب قرآن کریم کو آتشزدگی سے بچانے کے لیے ایک نوجوان الیاس تیزی سے آگے بڑھا اور اسلام مخالف شخص کو قرآن پاک کی بے حرمتی سے روکا جس پر دنیا بھر کے مسلمانوں کی جانب سے اس کی پذیرائی کی جارہی ہے اور اسے ہیرو قرار دیا جارہا ہے۔

اس واقعے پر دنیا بھر کے مسلمانوں میں شدید غم و غصہ پایا جاتا ہے جبکہ دفترخارجہ اور پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل آصف غفور نے بھی توہین قرآن کے واقعے کی شدید مذمت کی ہے۔

متعلقہ خبریں