Daily Mashriq


شناختی کارڈ فیسوں کو دوگنا کرنا ظلم ہے

شناختی کارڈ فیسوں کو دوگنا کرنا ظلم ہے

ملک کا سب سے زیادہ منافع کمانے والا اور مالدار ادارہ نادرا کا شناختی کارڈ بنانے کی فیس دوگنا کرنے کا اعلان جہاں غریب عوام پر اضافی بوجھ ڈالنا ہے وہاں اس سے قومی شناختی کارڈ بنانے کی حوصلہ شکنی بھی ہوگی ۔ سمندر پار پاکستانیوں کے کارڈوں کی فیس میں کمی نادرا کی مہربانی نہیں بلکہ عدالت عظمیٰ نے وزیر داخلہ کو اس کا حکم دیا تھا۔ ان کی عدالت کو یقین دہانی کے بعد بھی اس میں چند سوروپے کی کمی لائی گئی ہے ۔ ہم سمجھتے ہیں کہ نیشنل ڈیٹا بیس اور رجسٹریشن اتھارٹی کوئی کاروباری ادارہ نہیں بلکہ وطن عزیزکے شہریوں کو مستند شناختی دستاویزات فراہم کرنے والا قومی ادارہ ہے۔ اصولی طور پر ہر شہری کو یہ سہولت ریاست و حکومت کی طرف سے مفت فراہم ہونی چاہیئے۔ اگر ایسا ممکن نہیں تو اسے جگا ٹیکس لینے کیلئے استعمال کرنے کا کوئی جواز نہیں ۔ زیادہ سے زیادہ ہر شہری سے ان کے کارڈ بنانے کی لاگت اور متعلقہ عملے کے معاوضے کیلئے واجبی فیس وصول کی جانی چاہیئے مگر موجودہ حکومت ایک عدالتی حکم کی تعمیل کرتے ہوئے پورے ملک کے شہریوں کو سزا دے رہی ہے جس کا کوئی جواز نہیں ، عدالت عظمیٰ کو اس کا بھی نوٹس لینا چاہیئے اور متعلقہ حکام کو سمندر پار پاکستانیوں کے کارڈوں کی فیس میںکمی کی طرح مقامی شہریوں کے کارڈ وں کی فیسوں میں اضافہ کو کالعدم قرار دینا چاہیئے ۔

متعلقہ خبریں