Daily Mashriq

ایک درجن سے زائد کمپنیوں پر سائبر حملہ، صارفین کا ڈیٹا چوری

ایک درجن سے زائد کمپنیوں پر سائبر حملہ، صارفین کا ڈیٹا چوری

ہیکرز نے ایک درجن سے زائد عالمی ٹیلی کمیونیکیشن کمپنیوں کے نظام میں گھس کر بڑی تعداد میں صارفین اور کارپوریٹ ڈیٹا چوری کرلیا۔

 غیر ملکی میڈیا کے مطابق سیکیورٹی فرم ’سائبریزن‘ کے محققین نے بتایا ہے کہ ہیکرز نے 30 سے زائد ملکوں کی ٹیلی کمیونیکیشن کمپنیوں کو نشانہ بناتے ہوئے حکومت، قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں اور سیاسی اداروں سے وابستہ لوگوں کی معلومات چرالیں۔

 سائبریزن کے چیف ایگزیکٹو لیور ڈیو کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ ہیکرز  نے ایسے ٹولز استعمال کئے جو امریکا اور اس کے مغربی اتحادیوں کے خیال میں بیجنگ نے دوسرے حملوں میں استعمال کئے تھے۔

 ڈیو نے عالمی خبر رساں ادارے کو بتایا  کہ اتنی نفاست سے ہونیوالے سائبر حملے کسی جرائم پیشہ گروہ کا کام نہیں، یہ کام ایک ایسی حکومت کا ہے جو اس طرح کے حملوں کی اہل ہو۔

 سائبریزن نے ہیکنگ سے متاثرہ کمپنیوں کے نام ظاہر کرنے سے انکار کر دیا، تاہم ماضی میں چینی ہیکنگ آپریشنز سے آگاہ ماہرین کہتے ہیں کہ بیجنگ مغربی یورپ کی ٹیلی کام کمپنیوں پر حملے بڑھا رہا ہے۔

 دوسری جانب چین بارہا کسی سائبر حملے میں ملوث ہونے کی تردید کرتا آیا ہے۔

 ڈیو، جن کی ٹیم نے پچھلے نو مہینوں کے دوران مسلسل کام کرکے حالیہ ہیکنگ مہم کا پتہ چلایا، نے بتایا کہ حملوں کے دوران بڑی تعداد میں ڈیٹا چوری کرنے کے علاوہ بعض کمپنیوں کے داخلی آئی ٹی 

متعلقہ خبریں