Daily Mashriq

بجلی کے نرخ میں بتدریج 2روپے فی یونٹ سے زائد اضافہ کریں گے، عمر ایوب

بجلی کے نرخ میں بتدریج 2روپے فی یونٹ سے زائد اضافہ کریں گے، عمر ایوب

اسلام آباد: حکومت نے بجلی کے نرخوں میں بتدریج تین حصوں میں سوا 2 سے ڈھائی روپے فی یونٹ تک اضافے کا اعلان کیا ہے تاکہ دسمبر کے آخر تک گردشی قرضوں کو کم کر کے 250ارب روپے تک لایا جا سکے۔

ایک پریس کانفرنس سے خطاب وزیر توانائی عمر ایوب خان نے کہا کہ پہلا اضافہ آئندہ دو سے تین ماہ میں 1روپے یونٹ کا کیا جائے گا، بقیہ اضافہ دو سہ ماہیوں کے دوران کیا جائے گا۔

وزیر اعظم کی شعبہ توانائی کی ٹاسک فورس کے سربراہ کی حیثیت سے ندیم بابر کی تقرری کو مفادات کا ٹکراؤ قرار دینے کے سوال کا جواب دیتے ہوئے عمر ایوب خان نے کہا کہ ندیم ایک پیشہ ور شخصیت ہیں اور جو بھی تجاویز آتی ہیں، ان کا جائزہ لینا وزیر توانائی اور پاور سیکریٹری کا کام ہے۔

انہوں نے کہا کہ ندیم بابر کو کوئی ایگزیکٹو عہدہ نہیں دیا گیا اور یہ ذمے داری مجھ پر آ کر رک جاتی ہے۔

انہوں نے کہا سابقہ حکومت نے انتخابی فائدے کو مدنظر رکھتے ہوئے نیشنل الیکٹرک پاور ریگولیٹری اتھارٹی(نیپرا) کی جانب سے تجویز کردہ ٹیرف میں اضافے کے نوٹیفکیشن کو روک دیا تھا، نیپرا نے 3.66روپے فی یونٹ اضافے کی منظوری دی تھی لیکن اس اضافے کو عوام تک منتقل نہ کیا گیا جس کی وجہ سے گردشی قرضے حد سے زیادہ بڑھ گئے۔

وزیر توانائی نے کہا کہ سیاسی مفادات کے حصول کے لیے اس اضافے کو عوام تک منتقل نہ کیا گیا اور اسے اگلے حکومت کے لیے چھوڑ دیا گیا تاکہ اسے تمام تر دباؤ جھیلنا پڑے۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ حکومت نے 3.66روپے فی یونٹ اضافے کے بجائے اوسطاً 1.27روپے فی یونٹ بڑھانے کا فیصلہ کیا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت نے capacity payment کی مد میں 200ارب روپے مالیت کا اضافہ بھی عوام کو منتقل نہ کیا، اب حکومت اسے صارفین سے وصول کرے گی اور یہ رقم قسطوں میں وصول کی جائے گی۔

عمر ایوب نے الزام عائد کیا کہ سابقہ حکومت نے محض ووٹ حاصل کرنے کے لیے ان علاقوں میں مکمل بجلی فراہم کی جہاں سے حد سے زیادہ نقصان ہو رہا تھا، اس وقت 803ارب روپے کا گردشی قرضہ ہے ہم اسے کم کر کے دسمبر تک اسے 250ارب روپے تک لائیں گے، ہم 200ارب روپے کے سکوک بونڈز کے دوسرے راؤنڈ کا بھی اجرا کریں گے۔

ان کا کہنا تھا کہ ہم نے ڈسٹری بیوشن کمپنیوں سے وصولی کا عمل بہتر بناتے ہوئے بجلی چوری کے خلاف سخت اقدامات کر کے تین ماہ میں 40ارب روپے کا اضافہ کیا ہے اور اس عمل کو مزید بہتر بنائیں گے۔

متعلقہ خبریں