Daily Mashriq

ٹینس اسٹار پر چھری کے وار کرنے والے حملہ آور کو 8 سال قید

ٹینس اسٹار پر چھری کے وار کرنے والے حملہ آور کو 8 سال قید

جمہوریہ چیک سے تعلق رکھنے والے عالمی نمبر دو ٹینس اسٹار اور دو مرتبہ کی ویمبلڈن چمپیئن پیٹر کوویٹوا پر چھری کے وار کرنے والے حملہ آور کو 8 سال قید کی سزا سنا دی گئی۔

خبرایجنسی رائٹرز کی رپورٹ کے مطابق جمہوریہ چیک کی علاقائی عدالت کے ترجمان ایوا اینگیالوسی کا کہنا تھا کہ دو مرتبہ کی ویمبلڈن چمپیئن پیٹرا کوویٹوا پر حملہ آور نے دو مرتبہ چھری کے وار کیے تھے اور انہیں 8 سال کی قید سنائی گئی ہے۔

پیٹراکوویٹوا کے بائیں بازو پردسمبر 2016 میں اس وقت شدید زخم آئے تھے جب ان کے فلیٹ پر ایک حملہ آور نے چھریوں سے انہیں نشانہ بنایا تھا حالانکہ وہ بائیں بازو سے کھیلتی ہیں تاہم عدالت نے ان کے حملہ آور کی شناخت ریڈم زونڈرا کے نام سے کی۔

ٹینس اسٹار نے حملے کے حوالے سے اپنے بیان میں کہا تھا کہ ‘ہر طرف خون تھا اور پولیس کے پاس موجود فوٹو میں حملہ آور کو فوری شناخت کرلیا ہے’۔

عدالت کے ترجمان ایوا اینگیالوسی کا کہنا تھا کہ فیصلے کے بعد فوری طور پر کسی فریق نے اپیل دائر نہیں کی ہے لیکن دونوں فریق اپیل کا حق رکھتے ہیں۔

یاد رہے کہ 20 دسمبر2016 کو دو دفعہ کی ویمبلڈن چمپیئن پیٹرا کویٹووا نے اپنے فیس بک صفحے پر بیان میں کہا تھا کہ ایک شخص نے ان پر چھری سے حملہ کیا تاہم خوش قسمتی سے وہ بچ گئی ہیں۔

پیٹرا کویٹووا نے اپنے مداحوں کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا تھا کہ 'جیسا کہ آپ جانتے ہوں گے کہ آج میرے اپارٹمنٹ پر ایک شخص نے چھری سے مجھ پر حملہ کیا تھا'۔

ان کا کہنا ہے کہ 'میں نے اپنا دفاع کیا جس کے باعث میرے بائیں ہاتھ پرشدید زخم آگئے ہیں لیکن خوش قسمتی سے بچ گئی ہوں'۔

پیٹرا کوویٹوا اس حملے کے بعد کئی ماہ تک ٹینس سے باہر ہوگئی تھیں اور مئی 2017 میں واپسی کی تھیں۔

کوویٹوا اس وقت ٹینس کی عالمی درجہ بندی میں دوسرے نمبرپر ہیں اور آسٹریلین اوپن 2019 کے فائنل تک رسائی کی تھی جہاں انہیں نیاومی اوساکا سے 7-6، 5-7 اور 6-4 سے شکست کا سامنا کرنا پڑا تھا۔

متعلقہ خبریں