Daily Mashriq

بینک ٹرانزیکشنز پر ٹیکس کی حد میں ردو بدل نہیں کیا گیا، وفاقی وزیر

بینک ٹرانزیکشنز پر ٹیکس کی حد میں ردو بدل نہیں کیا گیا، وفاقی وزیر

اسلام آباد: وفاقی وزیر ریونیو محمد حماد اظہر نے وضاحت کردی کہ بینک اکاؤنٹس سے رقم نکلوانے پر مقررہ ٹیکس کی حد میں کوئی ردو بدل نہیں کیا گیا۔

انہوں نے کہا کہ دوسرے ضمنی مالیاتی بل برائے 2019 میں مذکوہ قانون کے دائرہ کار سے ٹیکس گوشوارے رکھنے والوں کو استثنیٰ دیا گیا ہے۔

سماجی روابط کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر ٹوئٹ کرتے ہوئے حماد اظہر کا کہنا تھا کہ ’بینک اکاؤنٹس سے رقم نکلوانے کی حد پر اور اس پر عائد ٹیکس میں کوئی تبدیلی نہیں کی گئی۔

انہوں نے بتایا کہ دوسرے ضمنی مالیاتی بل کے تحت اس قانون کا اطلاق ٹیکس گوشوارے رکھنے والوں پر نہیں ہوگا اور صرف نان فائلرز کو اس ٹیکس کی ادائیگی کرنی ہوگی۔

دوسری جانب فیڈرل بورڈ آف ریونیو (ایف بی آر) کا کہنا تھا کہ حکومت نے بینکس اکاؤنٹس سے رقم نکلوانے یا اس پر ٹیکس ادائیگی کی حد پر نظرِ ثانی نہیں کی اور بینکوں کے ذریعے انجام دیے جانے والے دیگر مالی معاملات مثلاً پے آرڈرز، ڈیمانڈ ڈرافٹس وغیرہ بھی کوئی تبدیلی نہیں کی۔

اس بارے میں ایف بی آر کے ترجمان نے ذرائع ابلاغ میں آنے والی خبروں کی تردیدی کرتے ہوئے کہا کہ حکومت نے یہ رعایتی اقدام اس لیے اٹھایا تا کہ بینک کے ذریعے کمرشل امور انجام دیے جائیں جو قابلِ ستائش ہے۔

متعلقہ خبریں