Daily Mashriq

پاکستان کاپلوامہ واقعہ کی تحقیقات کے عمل کومنطقی انجام تک پہنچانے کے عزم کا اظہار

پاکستان کاپلوامہ واقعہ کی تحقیقات کے عمل کومنطقی انجام تک پہنچانے کے عزم کا اظہار

پاکستان نے پلوامہ واقعہ کی تحقیقات کے عمل کومنطقی انجام تک پہنچانے کاعزم ظاہر کیاہے۔

اس عزم کااظہارپلوامہ واقعہ سے متعلق بھارتی دستاویزات کے بارے میں پاکستان کے ابتدائی تجزیے پردفترخارجہ اسلا م آباد میں غیرملکی سفیروں کوبریفنگ کے دوران کیا گیا۔

دفترخارجہ نے کہاکہ تحقیقات کے عمل کوجاری رکھنے کے لئے بھارت کی طرف سے مزیدمعلومات اوردستاویزات درکار ہوں گی۔

پاکستان نے اپنی تحقیقات کے ابتدائی تجزیے اورایک سوال نامے کابھارت کے ساتھ تبادلہ کیاہے۔

غیرملکی سفیروں کو بتایا گیا کہ بھارت نے 27 فروری2019 کو پاکستان سے ایک دستاویز کا تبادلہ کیا جو موصول ہوتے ہی پاکستان نے تحقیقاتی ٹیم تشکیل دی، پوچھ گچھ کےلئے متعدد افراد کو حراست میں لیاگیا اور سوشل میڈیا کے مواد کے تکنیکی پہلووں پر کام شروع کیا جو بھارتی دستاویز کی بنیاد ہے۔

غیرملکی سفیروں کو مزید بتایا گیا کہ تحقیقات کے دوران بھارت کی فراہم کردہ معلومات کے تمام پہلووں کا مکمل تجزیہ کیا۔

 سروس فراہم کرنے والی کمیٹیوں سے درخواست کی گئی کہ وہ سرگرمیوں کی متعلقہ تفصیلات اور بھارت کی طرف سے دئیے گئے جی ایس ایم نمبر کے رابطوں سمیت ڈیٹا مہیا کریں۔

واٹس ایپ سے معاونت کےلئے امریکی حکومت کو بھی درخواست کی گئی۔

 غیرملکی سفیروں کو بتایا گیا کہ54 گرفتار افراد سے تفتیش جاری ہے تاہم ابھی تک پلوامہ واقعہ سے ان کے تعلق کے کوئی شواہد نہیں ملے۔

 اسی طرح بھارت کی طرف سے فراہم کردہ 22 مقامات کا بھی جائزہ لیاگیا۔

ایسے کوئی کیمپ موجود نہیں ہیں پاکستان کسی درخواست پر ان مقامات کا دورہ کرانے کےلئے تیار ہے۔

متعلقہ خبریں