Daily Mashriq

ٹک ٹاک بنانے والے اب اسمارٹ فون تیار کرنے کے خواہشمند

ٹک ٹاک بنانے والے اب اسمارٹ فون تیار کرنے کے خواہشمند

ٹک ٹاک اس وقت دنیا بھر میں نوجوانوں کی پسندیدہ ترین ایپ ہے اور اب اس کی ملکیت رکھنے والی کمپنی بائیٹ ڈانس چیٹ اپلیکشنز اور اسٹریمنگ میوزک سے ہٹ کر ایک اسمارٹ فون کی تیاری پر کام کررہی ہے۔

فنانشنل ٹائمز کی رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یہ کمپنی اپنے اسمارٹ فون کی تیاری پر کام کررہی ہے اور اس کے لیے چینی کمپنی اسمارٹسین کے ڈیزائن اور ٹیلنٹ کو حاصل کیا گیا ہے۔

اور یہ حیران کن نہیں کہ یہ اسمارٹ فون بائیٹ ڈانس ایپس سے بھرا ہوا ہوگا۔

تاہم رپورٹ میں اس فون کے فیچرز یا متعارف کرائے جانے کی تاریخ کا ذکر نہیں کیا گیا مگر ذرائع کا کہنا ہے کہ بائیٹ ڈانس کے بانی زینگ یمینگ طویل عرصے سے ایک فون کی تیاری کا خواب دیکھ رہے ہیں۔

بائیٹ ڈانس نے اس رپورٹ پر کوئی بات کرنے سے انکار کیا ہے۔

اب یہ فون کتنا کامیاب ہوگا یہ کہنا تو مشکل ہے مگر عام طور پر کسی انٹرنیٹ کمپنی کے ارگرد گھومنے والے فونز اکثر ناکام ہوجاتے ہیں، کیونکہ ان میں صارفین کے تجربے کی بجائے کمپنی کی سروسز پر زیادہ توجہ دی جاتی ہے۔

ایمازون کا فائر فون بھی اس وجہ سے ناکام ہوگیا جبکہ فیس بک کا ایچ ٹی سی فرسٹ بھی لوگوں کی توجہ حاصل کرنے میں ناکام رہا۔

ان دونوں کمپنیوں نے فون کے انٹرفیس اور ہارڈ وئیر کی خامیوں کو نظرانداز کیا گیا۔

تاہم بائیٹ ڈانس کو دیگر کمپنیو ں کے مقابلے میں زیادہ ایڈوانٹیج حاصل ہے جس کو نوجوانوں میں ٹک ٹاک کی بدولت بہت زیادہ مقبولیت حاصل ہوچکی ہے۔

زیادہ امکان اس بات کا ہے کہ یہ فون امریکا یا یورپ کی بجائے چین یا بھارت جیسے ممالک کے لیے ہوگا جہاں کم قیمت فونز لوگوں کی زیادہ توجہ حاصل کرتے ہیں۔

متعلقہ خبریں