Daily Mashriq

شاہ زیب قتل کیس:شاہ رخ جتوئی کی سزائے موت کا فیصلہ کالعدم

شاہ زیب قتل کیس:شاہ رخ جتوئی کی سزائے موت کا فیصلہ کالعدم

ویب ڈیسک: سندھ ہائی کورٹ نے شاہ زیب قتل کیس میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کےمرکزی ملزم شاہ رخ جتوئی کی پھانسی کا فیصلہ کالعدم قرار دیدیا۔

سندھ ہائی کورٹ نے انسداد دہشت گردی کی عدالت کی جانب سے سزائے موت کے خلاف شاہ رخ جتوئی اور دیگر کی اپیلوں کی سماعت کی۔

ہائیکورٹ میں مقدمے کی سماعت کے دوران ملزمان کے وکلانے صلح کی درخواست عدالت میں جمع کرائی تھی جس میں بتایا گیا کہ دونوں فریقین کے درمیان صلح ہوچکی ہے۔

اس پر سندھ ہائی کورٹ نے انسداد دہشت گردی عدالت کے جج سے انکوائری رپورٹ طلب کی جس میں بتایا گیا کہ ذاتی عناد پر جھگڑا ہوا جس پر شاہ زیب کو قتل کیا گیا۔

آج سماعت کے دوران ملزمان کے وکلا نے سپریم کورٹ کے 2017 کے ایک فیصلے کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ ذاتی عناد کا جھگڑا دہشت گردی کے زمرے میں نہیں آتا۔

جب کہ پراسیکیوٹر جنرل شہادت اعوان نے مؤقف اختیار کیا کہ مدعی دستبردار ہوچکا ہےجس پر عدالت نے سوال کیا کہ یہ قتل ذاتی عناد ہے یا دہشت گردی۔

سندھ ہائی کورٹ نے ملزمان کے اس نکتے، کہ ذاتی عناد کا جھگڑا دہشت گردی کے زمرے میں نہیں آتا کو دیکھتے ہوئے معاملہ ٹرائل کے لئے سیشن عدالت کو بھیج دیا۔

متعلقہ خبریں