Daily Mashriq

ایل آر ایچ انتظامیہ عاجلانہ پن سے باز آجائے

ایل آر ایچ انتظامیہ عاجلانہ پن سے باز آجائے

صوبے کے سب سے بڑے ہسپتال لیڈی ریڈنگ میں وارڈوں سے دس دس بستر کم کرکے ان کو فیس وصول کرکے دینے کے اقدام سے سرکاری ہسپتال کی نجکاری کا گمان گزرتا ہے۔ ایسا کرنے میں ہسپتال انتظامیہ کی مالی منفعت ہے یا نہیں اس سے قطع نظر صورتحال یہ ہے کہ لیڈی ریڈنگ ہسپتال کے کسی وارڈ میں کوئی بستر شاید ہی کسی وقت مریضوں کے بغیر موجود ہو۔ ایل آر ایچ میں مریضوں کا رش لگا رہتا ہے ۔ آرتھو پیڈک وارڈوں سمیت بعض دیگرو ارڈوں میں مریضوں کو داخلے اور آپریشن کے لئے مہینوں کاوقت دیا جاتا ہے۔ ایسے میں دس بستروں کی کمی سے ان وارڈوں میں مریضوں کا داخلہ ا ور علاج سخت متاثر ہونا فطری امر ہوگا۔ سمجھ سے بالا تر امر یہ ہے کہ ہسپتال انتظامیہ مزید گنجائش پیدا کرکے اپنے منصوبوں پر عملدرآمد کی صورت تلاش کرنے کی بجائے پہلے سے موجود گنجائش کو محدود کرکے مریضوں کے علاج میں رکاوٹ کا باعث کیوں بن رہی ہے۔ ایل آر ایچ کے انتظامی معاملات اور منتظمین کا عہدوں سے استعفوں کے بعد موزوں امیدواروں کا نہ ملنا یا موزوں امیدواروں کے ان حالات میں کام کرنے پر تیار نہ ہونے جیسے معاملات سے سنگین صورتحال کی نشاندہی ہوتی ہے جس پر توجہ نہ دینے سے ہسپتال کا نظام بری طرح متاثر ہونا عجب نہ ہوگا۔ ہسپتال انتظامیہ کو عاجلانہ فیصلوں پر نظر ثانی کرکے زیادہ سے زیادہ مریضوں کا بہتر سے بہتر علاج یقینی بنانے پر توجہ دینی چاہئے۔

متعلقہ خبریں