Daily Mashriq

ٹرانسپورٹ اتھارٹی کا تکلف

ٹرانسپورٹ اتھارٹی کا تکلف

ٹرانسپورٹ اتھارٹی خیبر پختونخوا کی جانب سے صوبے کے مختلف شہروں کے مابین ڈیزل پر چلنے والی گاڑیوں کے کرایوں پر نظر ثانی کی اس لئے کوئی حیثیت اور وقعت نہیں کہ بین الاضلاعی ٹرانسپورٹرز پہلے ہی سے دو گنا زیادہ کرایہ وصول کر رہے ہیں۔ متعلقہ اتھارٹی کے علم میں ہونے کے باوجود ان عناصر کے خلاف کسی اقدام کی نوبت کبھی نہ آئی۔ متعلقہ حکام نے ٹرانسپورٹ کی درجہ بندی کرکے جن کرایوں کا تعین کیا ہے اس پر بھی عملدرآمد نہیں ہوتا۔ ائیر کنڈیشنڈ گاڑیوں میں گرمیوں کا کرایہ سردیوں میں بھی بدستور وصول ہو رہا ہوتا ہے۔ اضافی سیٹیں لگا کر مسافروں کو ٹھونسنے جیسے غیر قانونی اقدامات کا بھی کوئی پرسان حال نہیں۔ ٹرانسپورٹ اتھارٹی اگر خود کو حقیقی معنوں میں اتھارٹی گردانتی ہے تو ان کو چاہئے کہ وہ مقرررہ کرایوں کی پابندی بھی کروائے اور اضافی کرایہ وصول کرنے والے ٹرانسپورٹروں پر جرمانہ عائد کرے۔ جا بجا سڑکوں پر گاڑیاں روک کر مسافروں سے وصول شدہ اضافی کرائے واپس کروائے اور اڈوں پر اس امر کو یقینی بنایا جائے کہ مسافروں سے مقررہ کرایہ سے زیادہ رقم کی وصولی نہ ہو۔

متعلقہ خبریں