Daily Mashriq


ایان علی کبھی خوشی کبھی غم کی کیفیت سے دوچار،عدالت نے بیرونی ملک جانے کی اجازت دے دی،وزیر داخلہ نے عدالتی فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلینج کر دیا

ایان علی کبھی خوشی کبھی غم کی کیفیت سے دوچار،عدالت نے بیرونی ملک جانے کی اجازت دے دی،وزیر داخلہ نے عدالتی فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلینج کر دیا

ویب ڈیسک:سپریم کورٹ نے ایان علی ای سی ایل کیس سے متعلق وزارت داخلہ کی جانب سے دائر اپیل مسترد کرتے ہوئے ایان علی کا نام ای سی ایل میں سے نکالنے کا حکم دیدا، جبکہ سندھ ہائی کورٹ کا فیصلہ برقرار رکھتے ہوئے ماڈل ایان علی کو بیرون ملک جانے کی اجازت دے دی۔

تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس ثاقب نثار کی سربراہی میں تین رکنی بینچ نے وزارت داخلہ کی درخواست مسترد کردی۔

وزارت داخلہ نے ایان علی کوبیرون ملک نہ جانے دینے کی درخواست کی تھی ۔

کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس نےکہاکہ بتائیں ایان علی کے خلاف ایف آئی آر کب درج کی گئی۔

 

جواب میں ایڈیشنل اٹارنی جنرل کا کہنا تھا کہ 2جون2015کو کیس رجسٹرڈ ہوا تھا۔

 جس پر چیف جسٹس نے کہا کہ افسوس کی بات ہے اب تک مقدمےکی تفتیش مکمل نہیں ہوئی۔

دوسری طرف وزیر داخلہ کی جانب سے ایان علی کیس متعلق  عدالتی فیصل سپریم کورٹ میں چیلینج کر دیا۔ 

سپریم کورٹ میں جمع کروائی گئی درخواست میں وزارت داخلہ کی جانب سے جمع کرائی گئی درخواست میں موقف اختیار کیا گیا ہے کہ چونکہ ایان علی کا معاملہ سپریم کورٹ میں زیر سماعت ہے اس لئے سندھ ہائیکورٹ سماعت نہیں کر سکتی، یہ معاملہ سندھ ہائیکورٹ کے دائرہ کار سے باہر تھا اور اس کا فیصلہ انصاف کے تقاضوں کے منافی ہے لہٰذا اسے کالعدم قرار دیا جائے۔

درخواست میں مزید کہا گیا ہے   کہ ایان علی کیخلاف حساس نوعیت کا کیس زیرسماعت ہے اسلیئے ماڈل گرل کو بیرون ملک نہیں جانے دینگے۔ معلوم کرناچاہتےہیں ماڈل جوپیسے بیرون ملک لے جاتی رہی وہ کہیں دہشتگردی میں تو استعمال نہیں ہوئے۔

متعلقہ خبریں