Daily Mashriq

ٹوکیو، اولمپک 2020 کے انعامی تمغے پرانے موبائل فونز سے تیار

ٹوکیو، اولمپک 2020 کے انعامی تمغے پرانے موبائل فونز سے تیار

سال 2020 کے اولمپکس گیمزکے لیے پہلی بار ماحول دوست قدم اٹھاتے ہوئے انعامی تمغے پرانے موبائل فونز کو ری سائیکل کر کے تیار کیے گئے ہیں۔

 ٹوکیو میں ہونے والے اولمپک گیمز کیلئے ایک سال قبل ہی سونے چاندی اور کانسی کے تمغے 47 ٹن موبائل فونز کو ری سائیکل کر کے بنائے گئے ہیں۔

 اس اقدام کا مقصد دراصل قدرتی ماحول کے تحفظ کیلئے کاربن ڈائی آکسائیڈ گیس کا خاتمہ کرنا ہے۔ جس کے تحت سال 2017 میں ‘‘دی میڈل پراجیکٹ‘‘ کے تحت پورے جاپان سے پرانے اور ناکارہ فونز کو اکٹھا کر کے انہیں ری سائیل کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔

 جمع شدہ پرانے موبائل فونز کا مجموعی وزن 47 ٹن بنا۔ اس کے بعد ری سائیکلنگ سے ان فونزمیں سے دھات نکالی گئی جو 66 پاؤنڈ سونا، 9 ہزار پاؤنڈ چاندی اور 6 ہزار پاؤنڈ کانسی پر مشتمل ہے۔

 اتنی مقدار میں دھات سے ڈھائی ہزار تک میڈلز بنائے جا سکتے ہیں کیونکہ اولمپکس میں دیے جانے والے انعامی میڈل کا وزن 500 گرام تک ہوتا ہے اور سونے کے تمغے میں بھی سونے کی پوری مقدار استعمال نہیں کی جاتی۔

 ان تمغوں کی ایک اور خاص بات ان کی ربن ہے۔ یہ ایک ایسے خاص قسم کے پلاسٹک سے تیار کی گئی 

متعلقہ خبریں