Daily Mashriq

پیپل مندی کا 2ہزار سال پرانا درخت تجاوزارت کی زد میں

پیپل مندی کا 2ہزار سال پرانا درخت تجاوزارت کی زد میں

پشاور(صابر شاہ ہوتی) پشاورکی پیپل منڈی میں لگا پیپل کادو ہزار سال قدیم درخت تجاوزات اور انتظامیہ کی بے حسی کی نذرہورہا ہے جسکی وجہ سے یہ ہر گزرتے دن کے ساتھ کمزور اور بو سیدہ ہو تا جا رہا ہے ، دنیا کی قدیم ترین منڈیوں میں سے ایک پیپل منڈی ہے جو بڑے پیمانے پر تجارتی سرگرمیوں کیلئے مشہورہے۔ پیپل منڈی کا نام بھی بھی ا سی پیپل کے درخت کی وجہ سے منسوب ہے یہ درخت اتنا گھنا ہے کہ زمانہ قدیم سے آج تک لوگ اسی درخت کے سائے میں بیٹھ کر کاروبار کرتے ہیں۔ اس تناوردرخت کی جڑیں زیرزمین بہت دور تک پھیلی ہوئی ہیں اور یہ کہنا بے جا نہ ہوگا کہ شہر بھر میں آکسیجن کا ایک بہت بڑا ذریعہ یہی پیپل کا درخت ہے، مقامی لوگوںکاکہناہے کہ یہ درخت دو ہزارسال پرانا ہے اور وہ نسل در نسل اس کے نیچے ہی کاروبار کرتے چلے آرہے ہیں، ان دوکانداروں کا مزید کہنا تھا کہ پرانے زمانے میں یہاں پیپل کے درخت کے نیچے مندر ہوا کرتا تھا جہاں ہندو پوجا کیا کرتے تھے اسکی سب سے بڑی وجہ اسکا گھنا سایہ تھا ۔ پیپل کے درخت کو دیکھنے اور پیپل منڈی کی سیر کیلئے اب بھی بڑی تعداد میں لوگ آتے ہیں اور پیپل کے قدیم درخت کے پاس تصاویراور سیلفیاں بنواتے ہیں، جاپان سے آئی "اکیکو وادا" جو ستر سالہ بزرگ خاتون ہیں نے کہا کہ وہ پشاور پیپل منڈی میں پیپل کا درخت دیکھنے کیلئے 35سال قبل یہاں آئی تھی اوراب وہ اس کو دوبارہ دیکھ کر بہت خوش ہیں لیکن ساتھ ہی ساتھ افسردہ بھی ہیں کیونکہ یہ درخت تجاوزات اور مناسب دیکھ بھال نہ ہونے کی وجہ سے خستہ حال ہوچکا ہے اور پہلے سے زیادہ خراب ہے ۔ وہاں پرموجوددوکاندروں نے کہا کہ یہ درخت انکے لئے والدین کے سایہ جیسی اہمیت رکھتا ہے جو کہ انکو گرمی میں دھوپ سے بچاتا ہے انکا کہنا تھا کہ حکومت اس تاریحی ورثہ کو بچانے کیلئے مو ثر اقداما ت کرے۔

متعلقہ خبریں