Daily Mashriq

بے نظیر قتل کیس کا فیصلہ، پرویز مشرف اشتہاری قرار

بے نظیر قتل کیس کا فیصلہ، پرویز مشرف اشتہاری قرار

 ویب ڈیسک: ساڑھے نو سال بعدبے نظیر قتل کیس کا فیصلہ آگیا، سابق صدر پرویز مشرف اشتہاری قرار، 

تفصیلات کے مطابق راولپنڈی کی انسداد دہشت گردی عدالت نے بے نظیر بھٹو قتل کیس کا فیصلہ سنا دیا ہے جس میں 5 ملزمان کو بری، 2 کو سزا جب کہ سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کو اشتہاری قرار دیتے ہوئے ان کی جائیداد کی قرقی کا حکم دے  دیا۔

عدالت کے فیصلے میں پانچ گرفتار ملزمان رفاقت، حسنین، رشید احمد، شیر زمان اور اعتزاز شاہ کو بری کرنے کا حکم دیا گیا ہے۔

عدالتی فیصلے میں سابق ایس پی خرم شہزاد اور سابق سی پی او سعود عزیز  کو مجموعی طور پر 17، 17 سال قید کی سزا سنائی گئی جبکہ دونوں کو پانچ، پانچ لاکھ جرمانہ جمع کروانے کا بھی حکم دیا گیا۔

دونوں ملزمان کو احاطہ عدالت سے گرفتار کرلیا گیا ہے۔ حملے کے وقت سعود عزیز سی پی او راولپنڈی اور خرم شہزاد ایس پی تھے۔

2008ء کے انتخابات کے بعد پیپلز پارٹی برسر اقتدار آئی لیکن اس دوران سابق وزیراعظم کے مقدمہ قتل میں کوئی حوصلہ افزا پیش رفت نہ ہوسکی تھی۔

بے نظیر بھٹو کے قتل کیس کی 300 سے زائد سماعتیں ہوئیں جبکہ دوران سماعت انسداد دہشت گردی عدالت کے6 ججز تبدیل ہوئے۔

استغاثہ کے141 میں سے67 گواہوں کے بیانات رکارڈ کیے گئے۔ دیگر گواہوں کو غیر ضروری قرار دے کر ترک کر دیا گیا۔

متعلقہ خبریں