Daily Mashriq

برطانیہ کی پارلیمان میں بریگزٹ معاہدہ تیسری مرتبہ کثرت رائے سے مسترد

برطانیہ کی پارلیمان میں بریگزٹ معاہدہ تیسری مرتبہ کثرت رائے سے مسترد

برطانیہ کی پارلیمان میں بریگزٹ معاہدہ تیسری مرتبہ کثرت رائے سے مسترد کردیا گیا ۔ایوان نے معاہدہ دو سو چھیاسی کے مقابلے میں تین سو چوالیس ووٹوں سے رد کر دیا۔ اب برطانیہ کے پاس دو ہفتے ہیں کہ یہ طے کرنے کے لیے کے لیے کہ یورپی یونین سے مزید مہلت طلب کریں یا پھر 25 اپریل کو یورپی اتحاد سے الگ ہو جائیں۔۔ اپوزیشن لیڈر جرمی کوربن نے وزیر اعظم تھریسامے سے استعفیٰ کا مطالبہ کرتے ہوئے کہا کہ ملک میں عام انتخابات ضروری ہوگئے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہمیں فوری طور پر ملک کے مستقبل کا فیصلہ کرنا ہوگا۔

حکومت کی جانب سے تیسرے مرتبہ معاہدہ مسترد کیے جانے کے بعد ہزاروں افراد نے ویسٹ منٹسر کے باہر بریگزٹ کے حق میں احتجاجی مظاہرہ کیا ہے۔ مظاہرین کا مطالبہ تھا کہ فوری طور پر یورپی یونین کے علیحدگی اختیار کی جائے۔ 

متعلقہ خبریں